جموں کشمیر کمیونٹی اوورسیزکے تحت یوم دفاع اور یوم شہدا کی تقریب

62

 

1965 کی جنگ کے شہیدوں اور غازیوں کو سلام۔ ان کی قربانیوں نے پاکستان کے وجود کو برقرار رکھا اور پاکستان کے بہادر اور غیور عوام کا سر فخر سے بلند کیا۔ اسوقت مقبوضہ کشمیر میں بھی نوجوان 65والے جذبے کو دہرا رہے ہیں اللہ تعالی کشمیر کو بھی قربانیوں کا صلہ آزادی کی صورت میں دے گا۔ ان خیالات کا اظہار جموں کشمیر کمیونٹی اوورسیز کی طرف سے یوم دفاع اور یوم شہدا کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت چئیرمین JKCO سردار ایم اشفاق سیکریٹری جنرل نے نظامت کی۔ سردار وقاص عنایت نے کی۔
مقررین نے کہا کہ ۶ ستمبر ۱۹۶۵ کو پاکستان پر بھارت نے رات کے اندھیرے میں جنگ مسلط کرکے صبح کے ناشتے کا پلان لاہور میں کرنے کا خواب دیکھا جو اللہ نے اپنے خاص فضل وکرم سے پاکستان کی فوج اور قوم کو طاقت اور بصیرت کی دولت سے نواز کر خاک میں ملا دیا۔ دشمن کے ٹینک پاکستانی فوج کے سامنے بھوسہ ثابت ہوئے۔ ان کی گنوں کی بیرل گولے نکالنا بھول گئیں۔ انکے جہاز پرواز کرنے کے گر بھول گئے پاکستان کی بری بحری اور فضائی افواج نے اپنی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا بے مثال مظاہرہ کیا اور ۱۷ دن کی جنگ میں کسی بھی محاذ سے دشمن کو آگے بڑھنے نہ دیا۔ پاکستان کی فوج کیساتھ ساتھ پاکستان کی قوم کے ہر فرد ہر طبقے نے اس جنگ میں اپنا حصہ ڈالا اور دنیا کو بتایا کہ پاکستان ایک بہادر، نڈر اور با صلاحیت قوم ہے جو دنیا کی بڑی سے بڑی طاقت کو نیست ونابود کرنے کی ٹھان لے تو اسے دنیا کی کوئی طاقت روک نہیں سکتی۔
مقررین نے اس جنگ کے پس منظر پر بھی روشنی ڈالی اور اس بات کا اعادہ کیا کہ کشمیری قوم پاکستان کی عوام اور افواج پاکستان کے شانہ نشانہ ہر مشکل وقت میں کھڑی رہے گی ۔ پاکستان اس وقت مصائب کا شکار ہے اس کو مضبوط کرنا ہم سب کا فرض ہے۔ ایک مضبوط پاکستان اور معاشی طور پر خودمختار اور خودکفیل پاکستان کشمیر کا مقدمہ بہتر طریقے سے لڑ سکتا ہے ۔ ہم سب کی دعا ہے اور خواہش ہے کہ جس طرح آج مقبوضہ کشمیر میں نوجوان ستمبر ۶۵ والے جذبے کو زندہ کیے ہوئے کشمیر کی آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں اللہ ایک دن کشمیر کوبھی آزادی کی دولت سے مالا مال کرے گا۔ گذشتہ روز جی ایچ کیو میں ہونےوالی تقریب میں عسکری اور سیاسی قیادت کی مل کر اتحادواتفاق سے شرکت کو سراہا گیا۔
جن مقررین نے تقریب سے خطاب کیا ان میں سردار اشفاق، سردار عبداللطیف عباسی، غلام نبی بٹ، سردار اقبال، چوھدری خورشید متیال، راجہ زرین خان، چوھدری معروف حسین، سردار سجاد شاہین، عارف مغل، سردار ابرار شامل تھے۔
تقریب کے اختتام پر شہدا کے درجات کی بلندی، استحکام پاکستان اور کشمیر کی آزادی کی دعا بھی کی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ