صدرعارف علوی 24ستمبر کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرینگے

73

اسلام آباد(صباح نیوز)نومنتخب صدر عارف علوی 24ستمبر کو مجلس شوریٰ سے خطاب کریں گے،صدارتی خطاب کی تیاریاں شروع کردیں گئیں ،اعلی عسکری قیادت بھی نومنتخب صدر کا مجلس شوریٰ سے پہلا خطاب سننے کیلیے پارلیمنٹ آئیں گی ۔ تفصیلات کے مطابق نومنتخب صدرعارف علوی 24ستمبر کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کریں گے اور طرز حکومت کے سلسلے میں رہنما اصول بیان کریں گے ۔ عارف علوی کا بحیثیت مشترکہ اجلاس سے پہلا خطاب ہوگا۔ صدارتی خطاب سے پارلیمانی سال کا آغاز ہوجائے گااور 25ستمبر سے قومی اسمبلی کا باقاعدہ سیشن شروع ہوگا۔ صدر کا خطاب سننے کیلیے اعلیٰ سیاسی شخصیات غیر ملکی سفراء کے علاوہ اعلیٰ عسکری قیادت بھی مہمانوں کی گیلری میں موجود ہوگی ۔ ذرائع دعویٰ کررہے ہیں کہ اس بار منفرد صدارتی خطاب ہوگااوربہتراور صاف شفاف طرز حکمرانی کے سلسلے میں صدر مملکت رہنما اصولوں کے سلسلے میں اہم اعلان کرسکتے ہیں ۔ نومنتخب صدر عارف علوی اس حوالے سے نئی تاریخ رقم کرسکتے ہیں ۔ یاد رہے کہ صدارتی انتخاب کے دوران جب موجودہ صدر سے ممنون حسین اور عارف علوی کے درمیان کیا فرق ہوگاکا استفسار کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ قوم اس حوالے سے فرق محسوس کرے گی ۔ روایتی صدر بن کر نہیں رہوں گااور حکومت کو جہاں ضرورت پڑے گی اپنی رہنمائی کروں گا۔ صرف پاکستان تحریک انصاف نہیں بلکہ ساری جماعتوں پورے پاکستان کا صدر ہوں ۔صدارتی عہدے کے فرائض کے حوالے سے قوم تبدیلی محسوس کرے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ