سندھ میں 300 علماء وذائرین کے داخلے پر پابندی،اشتعال انگیز تقریر پر دہشتگردی کا مقدمہ رج ہوگا

93

کراچی (اسٹاف رپورٹر) محرم الحرام میں اشتعال انگیزتقاریرکرنے میں ملوث خطیب،عالم دین ،ذاکرین اور مذہبی شخصیات کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت فوری گرفتاری اور کارروائی کا حکم دے دیا گیا‘سندھ حکومت نے محرم الحرام میں بین المسالک ہم آہنگی برقرار رکھنے کے لیے پرجوش اوراشتعال انگیزتقاریرکرنے والے ملک بھرکے 300 سے زاید علما ،خطبا اورذاکرین کے سندھ میں داخلے پر پابندی لگادی۔ سندھ میں قیام پذیربعض مذہبی شخصیات کا نام بھی اس فہرست میں شامل کردیا گیا ہے‘ پابندی کا اطلاق60روز کے لیے ہوگا۔ حکومت سندھ نے محرم الحرام میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقراررکھنے کے لیے سخت اقدامات کا فیصلہ کرلیا ہے اوراشتعال انگیزتقاریرکرنے والے عالم دین ،خطیب، مذہبی شخصیت اورذاکرین کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے فوری گرفتاری کے لیے متعلقہ اداروں کواحکامات جاری کردیے گئے ہیں‘ اس ضمن میں صوبائی محکمہ داخلہ نے آئی جی سندھ پولیس، تمام ڈویڑنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کوخطوط ارسال کر دیے۔ ہر سال محرم الحرام کے دوران دیگر صوبوں اور سندھ کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے علما ذاکرین کے داخلے پر ایم پی او کے تحت بین الصوبائی اور بین الاضلاعی پابندی عاید کی جاتی ہے لیکن اس بار صوبائی حکومت ہی نہیں، بلکہ وفاقی وزرات داخلہ کے علاوہ قانون نافذ کرنے والے حساس ادارے بھی امن وامان اورمذہبی ہم آہنگی کی فضا برقراررکھنے کے لیے سرگرم ہیں۔دوسری جانب ملک بھرکے300 سے زاید علما، خطبا، مذہبی شخصیات اورذاکرین کے سندھ میں داخلے پر پابندی کی فہرست میں ایسے افراد کا نام بھی شامل ہے جوسندھ کے دارالحکومت کراچی کے رہائشی اورکراچی میں ہی مقیم ہیں‘ ان میں مولانا اورنگزیب فاروقی،مولانا مظفر حسین سمیت 5 مذہبی شخصیات جبکہ مولانا عبدالصمد سمیت اندرون سندھ مختلف شہروں سے تعلق رکھنے والی 30 مذہبی شخصیات کے نام بھی اس فہرست میں شامل ہیں۔ علاوہ ازیں ضلع پا کپتن میں دوران محرم امن و امان قائم رکھنے کے لیے 30 علمائے کرام و ذاکرین کے داخلے پر پابندی عاید کر دی گئی ہے۔ ان میں مولانا عبدالرحمن آف لیہ، مولانامحمد احمد راشدی ساہیوال، مولانا یحییٰ عباسی مظفر گڑھ، مولانا گلفام ہاشمی ملتان، مولانا مسعود الحق لاہور، مولانا آصف رضا علوی فیصل آباد، مولانا منظور احمد گوجرنوالا، مولانا سبطین شاہ نقوی سرگودھا، مولانا معاویہ اعظم جھنگ، مولانا محمد الیاس گھمن سرگودھا، ملازم حسین ڈوگر لودھراں، مولانا خادم حسین رضوی لاہور، ندیم سرور معاویہ اوکاڑا، ذاکر ذوالفقار علی شاہ میانوالی، ذاکر دلاور حسین ٹوبہ ٹیک سنگھ، ذاکر مستاق حسین آف بھلوال اور ذاکر حسین کانجو جلال پور اور دیگر شامل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ