آرٹس کونسل میں کتاب ’’پروفیسر حمزہ علوی‘‘ کی تعارفی تقریب

27

کراچی (پ ر) معروف دانشور، سعید حسن خان نے کہا ہے کہ حمزہ علوی ایک عوام دوست اور صاحب نظر دانشور تھے،ان کے نظریات اور فکر کو عام کرنے کی ضرورت ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں ڈاکٹر ریاض احمد شیخ کی کتاب ’’پروفیسر حمزہ علوی‘‘ (عوام دوست، مارکسی دانشور) کی تعارفی تقریب کے موقع پر اپنے صدارتی خطاب میں کیا، جس کی نظامت ڈاکٹر
توصیف احمد خان نے کی،دیگر مقررین میں زبیدہ مصطفی ، ڈاکٹر ہارون احمد، کرامت علی، انیس ہارون اور ڈاکٹر ایوب شیخ شامل تھے،ممتاز تاریخ داں اور دانشور ڈاکٹر مبارک علی نے ٹیلی فونک خطاب کیا،سعید حسن خان نے کہا کہ حمزہ علوی ایک بااصول آدمی تھے،ڈاکٹر ریاض احمد شیخ نے ان پر کتاب لکھ کر تاریخی کارنامہ انجام دیا ہے،زبیدہ مصطفیٰ نے کہا کہ حمزہ علوی نے ہمیشہ عوامی مسائل کو اپنی ترجیحات میں شامل رکھا،وہ اپنا علم لوگوں تک پہنچانے کا فریضہ بڑی خوش اسلوبی سے انجام دیتے تھے،ڈاکٹر ہارون احمد نے کہا کہ حمزہ علوی تمام زندگی اپنے نظریات پر ڈٹے رہے،اس کتاب میں ان کی زندگی کے تمام پہلوؤں کو اجاگر کیا گیا ہے حمزہ علوی کی زندگی کی ہر جہت روشن ہے،ان کے حوالے سے تحریر کی جانے والی یہ کتاب معلومات کا خزانہ ہے،انیس ہارون نے کہا کہ حمزہ علوی تمام زندگی مارکسی فلسفے کی جستجو میں رہے،جمہوریت کی بحالی کے حوالے سے بھی ان کی تحریریں ناقابل فراموش ہیں،انہوں نے ہر اُس تحریک کا ساتھ دیا جس نے عوام کی خدمت کا بیڑا اٹھایا، ان کی فکر،نظریات اور کتابیں ہمیں دعوت غور و فکر دیتی ہیں،کرامت علی نے کہا کہ حمزہ علوی اپنے سماج سے جڑے ہوئے قلمکار تھے، وہ آخری وقت تک اپنے نظریات پر کاربند رہے،ان کا چھوڑا ہوا اثاثہ زیادہ تر انگریزی میں ہے،اسے اردو اور دیگر زبانوں میں منتقل کرنے کی ضرورت ہے،ڈاکٹر مبارک علی نے اپنے ٹیلی فونک خطاب میں کہا کہ حمزہ علوی کے حوالے سے ڈاکٹر ریاض احمد شیخ نے کتاب لکھ کر بڑی اہم خدمت انجام دی ہے،انہوں نے کہا کہ حمزہ علوی نے نہایت موثر اور پرمغز مقالات تحریر کئے ہیں،ان کا ہر مقالہ ایک کتاب کا درجہ رکھتا ہے،ان کی کتابوں کے دیگر زبانوں میں بھی تراجم ہوچکے ہیں،انہوں نے یورپ کے دانشوروں میں بھی نمایاں مقام حاصل کرلیا تھا۔
کتابک کی تقریب

Print Friendly, PDF & Email
حصہ