ایشین گیمزسیمی فائنل میں شکست پرافسردہ ہیں‘رضوان سینئر

117

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان ہاکی ٹیم کے کپتان رضوان سینئر کو ابھی تک ایشین گیمز کے سیمی فائنل میں جاپان کے ہاتھوں شکست کا یقین نہیں آ رہا لیکن وہ اس تاثر کو سختی سے مسترد کرتے ہیں کہ سیمی فائنل میں کھلاڑی پورے جذبے سے نہیں کھیلے تھے۔برطانوی نشریاتی ادارے کو دیے گئے انٹرویو میں ہاکی ٹیم کے کپتان نے کہا کہ شکست کے بعد کھلاڑیوں کی کمٹمینٹ پر جو سوالات اٹھائے گئے ہیں ان پر انھیں بہت دکھ ہے کیونکہ کوئی بھی کھلاڑی جان بوجھ کر ہارنے کے لیے میدان میں نہیں اترتا۔کوئی بھی کھلاڑی یہ نہیں چاہتا کہ ٹیم کو شکست ہو۔ کون چاہے گا کہ وہ جان بوجھ کر ہارے۔؟ جتنا کسی بھی دوسرے شخص کو پاکستانی ٹیم کی شکست پر دکھ ہے اس سے کہیں زیادہ دکھ کھلاڑیوں کو ہے۔ ہم نے کراچی کی گرمی اور حبس میں سخت ٹریننگ کی تھی اور پورے جذبے کے ساتھ ایشین گیمز میں گئے تھے۔جاپان کے خلاف پاکستان کی شکست کی وجہ کیا تھی؟ اس سوال پر رضوان سینئر نے تسلیم کیا کہ کھلاڑی ذہنی طور پر ریلیکس کر گئے تھے۔بھارت کا سیمی فائنل ہم سے پہلے تھا جس میں ملائیشیا نے اسے شکست دیدی تھی جس کے بعد ہمارے ذہنوں میں یہی بات آ چکی تھی کہ اب گولڈ میڈل پکا ہے۔ ہم ذہنی طور پر تھوڑا سا ریلیکس کر گئے تھے۔رضوان سینئر اس شکست کو قسمت کی خرابی بھی سمجھتے ہیں۔ہم نے پہلا کوارٹر اسٹارٹ کیا جو اتنا اچھا نہیں تھا۔ ہم پر ایک گول شارٹ کارنر پر ہو گیا۔ دوسرے کوارٹر میں ہمیں مواقع ملے جن سے ہم فائدہ نہیں اٹھا سکے۔ ہم نے میچ برابر کرنے کی ہر ممکن کوشش کی لیکن ہم کامیاب نہیں ہو سکے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ