خواتین کے کا روباری ادارے ملک کی معا شی ترقی میں ایم کردار ادا کرسکتے ہیں ، فطرت الیاس بلور

103
خواتین کے کا روباری اداروں اور گڈ گورننس سیمینار سے، پیٹرن ان چیف وویمن چیمبر آف کامرس انڈ انڈسٹر ی فطرت الیا س بلور خطاب کررہی ہیں
خواتین کے کا روباری اداروں اور گڈ گورننس سیمینار سے، پیٹرن ان چیف وویمن چیمبر آف کامرس انڈ انڈسٹر ی فطرت الیا س بلور خطاب کررہی ہیں

کراچی (اسٹاف رپورٹر)خواتین کے کا روباری ادارے ملک کی معا شی ترقی کے لیے بہت کچھ مہیا کر سکتے ہیں جبکہ وہ یہ سمجھ جا ئیں کہ ان کے کا روبار میں شراکت داری ، گورنمنٹ ،سو ل سو سا ئٹی میں ان کے کیا حقو ق ہیں اور ان کا کا م کیا ہے اور اپنے راستہ میں حا ئل مواقع سے فا ئد ہ اُٹھا ئیں اور گلو بل والیو کے نتا ئج کو بھی دیکھتے رہیں ۔ ان خیالات کا اظہار پیٹرن ان چیف ویمن چیمبر آف کامرس انڈ انڈسٹر ی فطرت الیا س بلورنے خواتین کے کا روباری اداروں اور گڈ گورننس پر سمینار سے خطا ب کر تے ہو ئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ ویمن اکنا مک افرادی قو ت وہ ہے کہ جس معا شی آزادی مگر ذمہ داری سے پو ری کی جا ئے اور اس میں انہیں اپنی خواہشو ں کو اپنے چو ائس سے کر نے کی آزادی ہو اور انہیں اپنے معا شی فیصلہ لینے کے لیے آسانی ہو اور اس سے ان کی زند گی ان کی فیملی کی زند گی کمیو نٹی اور سو سا ئٹی کی طرف مکمل رسا ئی ہو اور ان معا ملا ت میں ان چیز وں پر اچھا اثر پڑے گا ۔ انہو ں نے ایف پی سی سی آئی کی قیادت کا اس کا نفر نس کے انعقاد کے لیے شکر یہ ادا کیا اور انہوں نے ویمن کا روبا ری اداروں کو مکمل تعاون کی یقین دھا نی کراتے ہو ئے سو سا ئٹی کو ایک پیغا م دیا کہ ادارہ ان سے مکمل تعاون کرے گا اور تر بیت یا فتہ کا روباری اداروں کی خواتین بہتر طو ر پر پاکستان کی معیشت کے لیے اچھا کردار ادا کر سکتی ہیں ۔اس موقع پر سابق صدر ایف پی سی سی آئی ایس ایم منیر نے کہاکہ یہ بات دنیا میں اظہر من اشمش ہے کہ کو ئی بھی قو م اس تک تر قی نہیں کر سکتی جب تک خواتین کا انہیں تعاون حاصل نہ ہو اور کو ئی بھی قو م اس وقت تک مضبوط قو م نہیں بن سکتی جب تک اس ملک کے مرد اور خواتین اپنے ملک کی معیشت کی خو شحالی کے لیے مل کر مقا صد کے حصو ل کے لیے کو ششیں نہ کر یں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ