عاطف میاں کا تقرر آئین پاکستان کیخلاف گھناؤنی سازش ہے،جماعت اسلامی سندھ

61

کراچی( اسٹااف رپورٹر )امیرجماعت اسلامی سندھ ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے پی ٹی آئی حکومت کی جانب سے ایک قادیانی مبلغ عاطف میاں کو اقتصادی مشاورتی کونسل کا رکن نامزد کرنے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے نظریہ و آئین پاکستان کے خلاف سازش اور ملک کی نظریاتی سرحدوں کو کھوکھلا کرنے کے مترادف قرار دیا ہے۔ انہوں نے ایک بیان میں مزید کہا کہ قادیانی آئین پاکستان کی رو سے غیر مسلم ہیں، مفکر اسلام علامہ اقبال ؒ نے بھی قادیانیوں کو ملک واسلام دونوں کا غدار قرار دیا تھا ،قادیانی آئین پاکستان کو بھی نہیں مانتے کیونکہ آئین پاکستان کا آرٹیکل 5تقاضا کرتا ہے کہ پاکستان کا ہر شہری ریاست کا وفادار اور آئین وقانون کا پابند ہو، عقیدہ ختم نبوت، تحفظ ناموس رسالتؐ قانون کا دشمن اور آئین پاکستان سے انحراف کرنے والا فردکیسے مالیاتی
کمیٹی کا رکن اور ملک کا وفادار بن سکتا ہے؟ وفاقی وزیراطلاعات کی جانب سے قادیانی مبلغ کی وکالت اور عاشقان رسولؐ کو انتہاپسند قرار دینا خود ایک کھلی دہشت گردی ہے، انہوں نے کہا کہ تمام مذہبی جماعتیں رانا بھگوان داس، جسٹس اے آر کارنیلئس، رانا چندر سنگھ، جسٹس دراب پٹیل ، راجا تری دیو رائے جیسے افراد کی خدمات کی معترف رہی ہیں اور ابھی گزشتہ روز سندھ میں صوبائی وزیر مکیش کمار چاؤلہ نے حلف اٹھایا ہے اس پربھی کسی نے اعتراض نہیں کیا۔ قادیانی آئین پاکستان کو تسلیم نہیں کرتے ،آئین پاکستان کا انکار کرنے والے پاکستان میں کس طرح کلیدی عہدے پر براجمان ہو سکتے ہیں؟ وفاقی وزیر اطلاعات آئین پاکستان کی تاریخ کا مطالعہ کریں، قادیانی آئین پاکستان کے مطابق نہ تو اقلیتوں کی فہرست میں اپنا نام درج کراتے ہیں اور نہ ہی آئین پاکستان کے تحت انتخابات میں حصہ لیتے ہیں۔ عاطف میاں قادیانی مبلغ مرزا مسرور کے مالیاتی مشیر ہیں ، حکومت فوری طور پر عاطف میاں کے تقرر کو منسوخ کرے اور اپنے وزرا کو لگام دے۔صوبائی امیر نے کہاکہ اسلام اقلیتوں کی جان ومال کی حفاظت سمیت احترام انسانیت کا درس دیتا ہے مگر اسلام کی آڑ میں عقیدہ ختم نبوت ،تحفظ ناموس رسالت قانون سمیت ملک کی نظریاتی سرحدوں کے خلاف کوئی سازش برداشت نہیں کی جاسکتی۔یوم ختم نبوت کے موقع پر جاری اپنے بیان میں جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکرٹری ممتاز حسین سہتو ایڈووکیٹ نے کہا کہ ختم نبوت اور تحفظ ناموس رسالتؐ ہر مسلمان کے ایمان و عقیدے کا حصہ ہے عاشقان رسولؐ کے لیے 7 ستمبر یوم تجدید عہد کا دن ہے ،یوم ختم نبوت کے موقع پر اقتصادی مشاورتی کونسل جیسے اہم فورم میں ایک قادیانی مبلغ عاطف میاں کا تقرر ملک وقوم اورآئین پاکستان کے خلاف گھناونی سازش ہے،پی ٹی آئی حکومت کے اس آئین شکن اقدام سے قوم کو سخت مایوسی ہوئی ہے۔ ممتاز سہتو نے مزید کہا کہ اہل پاکستان تحفظ ناموس رسالتؐ قانون میں کسی بھی قسم کی ترمیم یا تنسیخ کو قبول نہیں کریں گے۔ ملک میں کھلے عام قادیانیوں کی سرگرمیوں کا سختی سے نوٹس لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ 7 ستمبر 1974ء تاریخ کا ناقابل فراموش دن ہے کہ جس دن فتنہ قادیانیت کے خلاف جاری جدوجہد رنگ لائی اور پارلیمنٹ نے قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ