سرحد پر جھڑپ میں 4 سعودی فوجی ہلاک‘ میزائل حملے ناکام

32
جازان: سعودی دفاعی نظام حوثیوں کے میزائل تباہ کرنے کے لیے متحرک ہوگیا ہے
جازان: سعودی دفاعی نظام حوثیوں کے میزائل تباہ کرنے کے لیے متحرک ہوگیا ہے

ریاض (انٹرنیشنل ڈیسک) سعودی حکام نے یمن کے ساتھ ملحق سرحد پر اپنے 4 فوجی اہل کاروں کی ہلاکت کی تصدیق کردی۔ چاروں سعودی فوجی یمنی باغیوں کے ساتھ جھڑپوں میں مارے گئے۔خبررساں اداروں کے مطابق سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے حوثی باغیوں کی طرف سے داغے گئے 2 بیلسٹک میزائل سرحدی شہر جازان میں مار گرائے۔ سعودی عسکری ذرائع نے بتایا کہ بیلسٹک میزائلوں کوہدف تک پہنچنے سے پہلے ہی پیٹریاٹ میزائل کے ذریعے تباہ کر دیا گیا۔واقعے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ حوثیوں کی دعویٰ ہے کہ جازان پر حملوں کے دوران وہاں سعودی عرب کی تیل کمپنی آرامکو کو نشانہ بنایا گیا تھا۔ دوسری جانب یمنی صدر منصور ہادی نے کہا کہ جنیوا مذاکرات میں سابق صدرعلی صالح کی لاش کی واپسی اور ان کے بیٹوں کی رہائی اولین ترجیحہوگی۔یمن کے وزیر اطلاعات معمر اریانی کے مطابق صدر عبدربہ منصور ہادی نے جنیوا مذاکرات میں حکومت کی نمایندگی کرنے والے وفد کو خصوصی ہدایات جاری کی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ