سندھ کے تعلیمی اداروں میں کولڈرنکس اور اسنیکس پرپابندی عائد

267

کراچی:سندھ فوڈ اتھارٹی نے صوبے کے تمام اسکول وکالجز میں کاربونیٹڈ سافٹ ڈرنکس، انرجی ڈرنکس اور پاپڑ سمیت رنگ دار اسنیکس کی فروخت پر پابندی عائد کردی۔

اس سلسلے میں جاری نوٹیفکیشن کے مطابق تعلیمی اداروں (اسکول اور کالجز)میں انرجی، سافٹ اور کاربونیٹڈ ڈرنکس کی خریدو فروخت سمیت غیر معیاری چپس کی دستیابی پر پابندی لاگو ہوچکی ہے ، اجینو موتو (چائنا سالٹ) کی خریدو فروخت پر بھی پابندی لگادی گئی ہے ، اس کے ساتھ ساتھ ساتھ گائے اوربھینس کے نوزائیدہ بچھڑوں کو بھی ذبح کرنے پر پابندی عائد کردی گئی۔

اس کے علاوہ کھلے مصالحوں کی فروخت ایک سال کے بعد بند کی جائیگی۔ ایک سال کے اندر اندر کھلے مرچ مصالحے والے پیکٹ متعارف کرائے جائیں گے تاکہ ملاوٹ کا سد باب کیا جاسکے ۔ سندھ میں پھلوں کو کاربائیڈ سے پکانے پر بھی پابندی عائد کردی گئی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق کاربائیڈ جو کہ سبزیاں اور پھل وقت سے پہلے پکانے کے لیے استعمال ہوتا ہے اورانسانی صحت کے لیے مضر ہے پر بھی ایک سال کے بعد پابندی عائد کی جائے گی۔ مس لیبلنگ یعنی پیک کے اندر کچھ اور ہو اور اوپر لکھا کچھ اور ہو اس پر بھی پابندی لگ چکی ہے۔ رنگ کاٹ بلیچنگ ایجنٹ جو کہ مٹھائی اور میٹھی مصنوعات کی تیاری میں استعمال کیا جاتا ہے اس پر بھی پابندی لگادی گئی ہے ۔ کھلے آئل/گھی پر بھی پابندی عائد کردی گئی ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ