پی ٹی آ ئی اور (ق) لیگ کا پنجاب میں نیا بلدیاتی نظام متعاروف کرانے کا فیصلہ 

51

لاہور(اے پی پی )پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین اور سینئرمرکزی رہنما چودھری پرویزالٰہی سے تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین، عبدالعلیم خان، اسحاق خاکوانی اور چودھری ظہیرالدین نے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی ،ملاقات میں نومنتخب ایم این اے طارق
بشیر چیمہ، میاں عمران مسعود اور سلیم بریار بھی موجود تھے۔ دونوں جماعتوں کے رہنماؤں نے اسپیکر، ڈپٹی اسپیکر کے انتخابات اور آئندہ درپیش چیلنجز پر بات چیت کی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا کہ چودھری پرویزالٰہی نے پنجاب میں بہترین حکومت اور مثالی کام کیے،اب ہم نے تمام منصوبوں اور شعبوں میں بہتری لانی ہے، صوبے میں 56 کمپنیاں بنائی گئیں جن کے کیس نیب میں چل رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پرویزالٰہی کے نام کی تختی والے منصوبوں کو بند کیا گیاجب کہ 2002ء سے 2007ء تک جو کام پرویزالٰہی نے کیے آج تک نہیں ہوئے، پنجاب میں نیا بلدیاتی نظام لائیں گے اور ہر ادارے کا آڈٹ کرائیں گے۔ چودھری پرویزالٰہی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملاقات میں آئندہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اورخاص کرلوکل باڈیز کے حوالے سے بات چیت ہوئی کہ نیا بلدیاتی نظام متعاروف کرایا جائے گا،(ن) لیگ کی حکومت نے لوکل باڈیز سسٹم کو بری طرح تباہ کر دیا ہے، ہم نئے نظام کے تحت اختیارات اور فنڈز کی تقسیم نچلی سطح پر لائیں گے، صوبے میں شیخ چلی جیسے منصوبے بنائے گئے اور مالی طور پر صوبے کو برباد کر دیا گیا، اسپتالوں، ایجوکیشن ہر سطح پر تباہی مچائی،ہماری نیت، سوچ اور ارادے ٹھیک ہیں، حالات اب بہتر ہوں گے، اسپیکر شپ حاصل ہونے کے بعد میرا ٹارگٹ صوبے، ملک اور عام آدمی کے مفاد کے لیے کام کرنا ہو گا،اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلوں گا، پنجاب اسمبلی کی نئی بلڈنگ کا کام 75 فیصد مکمل ہو چکا تھا اسے مکمل کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ