منی لانڈنگ اور آف شور کمپنیاں ،میاں منشا اور زلفی بخاری نیب طلب 

33

لاہور،اسلام آ باد(نمائندہ جسارت+صباح نیوز) لاہور نیب کی3 رکنی ٹیم نے میاں منشا کو 95ملین ڈالر منی لانڈرنگ کی تحقیقات کے لیے 17اگست کو طلب کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق چیئرمین پاکستان ورکر پارٹی فاروق سہلریا کی جانب سے میاں منشا کے خلاف نیب میں درخواست دائر کی گئی تھی۔جس پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے ڈی جی نیب لاہور کو ہدایت کی تھی کہ وہ معاملے کی فوری تحقیقات کریں۔جس پر ڈی جی لاہور نیب نے الیکشن سے قبل فاروق سہلریا کو نیب میں طلب کیا تھا کہ وہ تمام الزامات کے ثبوت پیش کریں جو کہ چیئرمین پاکستان ورکر پارٹی نے دستاویزات کے ساتھ جمع کرائے اور اپنا بیان
بھی ریکارڈ کرایا کہ میاں منشا نے 95ملین ڈالر منی لانڈرنگ کرکے پاکستان سے برطانیہ منتقل کیے ہیں۔جس پر اب نیب نے میاں منشا کو 95 ملین ڈالر منی لانڈرنگ کی تحقیقات کے لیے 17 اگست کو لاہور نیب میں طلب کر لیا ہے۔واضح رہے کہ ایم سی بی ‘ نشاط گروپ‘ڈی جی خان سیمنٹ‘آدم جی انشورنس اور نشاط پاور کمپنیاں میاں منشا کی ملکیت ہیں۔دوسری جانب تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے قریبی ساتھی زلفی بخاری پھر نیب کے ریڈار میں آگئے ہیں اور انہیں آئندہ ہفتے نیب میں طلبی کے سمن جاری کردیے گئے ہیں۔نیب ذرائع کے مطابق زلفی بخاری سے آف شور کمپنیوں کے بارے میں تحقیقات ہوں گی،تحقیقات کے لیے نیب کی مشترکہ تفتیشی ٹیم نے سوالنامہ تیار کرلیاہے۔ذرائع کے مطابق زلفی بخاری کو کڑے سوالات کا سامنا کرنا پڑے گا۔انہوں نے پچھلی پیشیوں پر دیے گئے سوالنامے کا ایک ماہ گزرنے کے باوجود بھی کوئی جواب نہیں دیاہے۔نیب نے زلفی بخاری کی آف شور کمپنیوں سے متعلق برطانیہ سے آڈٹ رپورٹ بھی حاصل کررکھی ہے۔نیب کی تفتیشی ٹیم آڈٹ رپورٹوں کی روشنی میں سوالات کرے گی۔واضح رہے کہ زلفی بخاری کا نام ای سی ایل میں بھی شامل کیا جا چکا ہے۔8اگست کو ذرائع کے مطابق زلفی بخاری کا نام نیب کی درخواست پر ای سی ایل میں ڈالا گیا۔نگراں وفاقی وزیر داخلہ اعظم خان کی سربراہی میں کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے بھی نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی منظوری دی تھی۔ان پر الزام ہے کہ انہوں نے دیگر افراد کی معاونت سے برٹش ورجن آئی لینڈز پر آف شور کمپنیاں بنا رکھی ہیں، جن کی تحقیقات کی جا رہی ہیں اور وہ منی ٹریل پیش کرنے میں ناکام ہو گئے ہیں۔ ادھراحتساب عدالت کے جج نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں ملوث وزیراعظم کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کا باقاعدگی سے طبی معائنہ کرانے کی ہدایات کر دی ہیں۔ عدالت نے ڈی جی نیب پنجاب کو ہدایت کی ہے کہ ملزم کے علاج میں کسی بھی قسم کی غفلت نہ برتی جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ