کے ڈی اے افسرکی درخواست ضمانت‘ ہائیکورٹ نے رپورٹ طلب کرلی

59

کراچی (اسٹاف رپورٹر) 462 ارب روپے کے کرپشن ریفرنس میں ڈاکٹر عاصم کے شریک ملزمان کی ضمانت کے معاملے پر سندھ ہائی کورٹ نے احتساب عدالت سے رپورٹ طلب کرلی ۔ سندھ ہائی کورٹ میں سابق ڈائریکٹر لینڈ کے ڈی اے اطہر حسین کی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی۔ نیب پراسیکیوٹر منصف جان نے ضمانت کی شدید مخالفت کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ریفرنس کی سماعت تیزی
سے جاری ہے‘ 17 گواہوں کے بیانات قلمبند ہوچکے ہیں‘ سماعت روزانہ کی بنیاد پر جاری ہے۔ واضح رہے کہ اطہر حسین پر کلفٹن کے علاقے میں 2 ایکڑ سے زاید اراضی غیرقانونی طور پر ڈاکٹر عاصم کو الاٹ کرنے کا الزام ہے۔علاوہ ازیں احتساب عدالت نے نیب گواہ کی عدم حاضری کے باعث ڈاکٹر عاصم کے خلاف جے جے وی ایل ریفرنس کی سماعت 18 اگست تک ملتوی کردی۔ احتساب عدالت میں ڈاکٹر عاصم اور دیگر کے خلاف 17 ارب رپے کرپشن ریفرنس کی سماعت ہوئی ۔ ڈاکٹر عاصم نے سماعت کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ چودھری نثار نے جو میرے ساتھ کیا اس کو میری بد دعا لگی اور آج ان کا حشر دیکھیں۔ دریں اثنا احتساب عدالت میں محکمہ اطلاعات میں پونے 6 ارب روپے کے کرپشن ریفرنس کی سماعت 28 اگست تک ملتوی کردی گئی ۔ سماعت کے موقع پر سابق صوبائی وزیر شرجیل انعام میمن اور دیگر ملزمان پیش ہوئے۔ عدالت میں نیب کی گواہ زینت جہاں کے بیان پر ملزمان کے وکلا کی جرح جاری تھی کہ عدالتی وقت ختم ہونے کے باعث مزید سماعت 28 اگست تک ملتوی کردی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ