حیدر آباد، ایکسائز افسر کا اغوا، بیٹے کا سی آئی اے انچارج پر الزام

116

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) ڈاکٹر عمیر عباس نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے والد ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن افسر مدد علی کوڈی ایس پی ، سی آئی اے حیدرآباد اسلم لانگا نے مبینہ طو پر حیدرآبادٹول پلازا سے اغوا کرلیا اور انہیں خدشہ ہے کہیں ان کے والد کو جعلی مقابلے کا شکار نہ بنادیا جائے وہ گزشتہ شب رات گئے ہنگامی پریس کانفرنس کررہے تھے۔ عمیر عباس نے بتایا کہ ان کے والد دادو میں ایک مقدمے میں پیشی کے بعد حیدر آباد آرہے تھے کہ انہیں اغوا کرلیا گیا، ان کی گاڑی بھٹائی نگر تھانے میں کھڑی ہوئی ہے، عمیر عباس نے کہاکہ سی آئی اے پولیس اور حیدر آباد پولیس کا دعویٰ ہے کہ انہیں میرے والد کی گاڑی لاورث ملی تھی جو بھٹائی نگر تھانے میں لاکر کھڑی کردی گئی ہے، جب میں نے اپنے والد سے متعلق سوالات کیے تو مجھے دھکے مارکر تھانے سے نکال دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ میرے والد کی ایک ماہ قبل مٹیاری میں تعیناتی ہوئی جہاں انہیں دادو پولیس نے گرفتار کیا تھا کیونکہ ان کیخلاف ایک وکیل رفیق آرائیں نے جھوٹا مقدمہ درج کروایا تھا، میرے والدکا ماضی میں مسلم لیگ ن سے تعلق رہ چکا ہے اور دادو میں ان کیخلاف بلیک میلنگ، دھمکیاں دینے اور بھٹائی نگر تھانے پر سرکای ڈیوٹی میں مداخلت کے مقدمات درج ہیں وہ ان مقدمات میں ضمانت پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میرے والد کو سی آئی اے حیدر آباد کے انچارج اسلم لانگا نے انتقامی کارروائی کا نشانہ بناتے ہوئے گرفتار کرکے غائب کیا ہے۔ چیف جسٹس، وزیر اعلیٰ، آئی جی سندھ سمیت دیگر نوٹس لیں اور فوری کاروائی کرکے انہیں بازیاب کرایاجائے، ہمیں خدشہ ہے کہ اسلم لانگا انہیں جعلی مقابلے میں مروا دے گا۔ واضح رہے کہ سی ائی اے انچارج اسلم لانگاہ کیخلاف اس ہفتے میں ایک ہی نوعیت کا دوسرا الزام ہے۔ اس سے قبل بھی ایک خاتون نے پریس کانفرنس میں اپنے بھائی کو مبینہ طور پر اسلم لانگاہ کی جانب سے گرفتار کرکے غائب کرنے کا الزام لگایا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ