حیدر آباد، بھٹائی کالونی کے رہائشی کا کمپنی سے نکالے جانے کیخلاف احتجاج

26

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) کوٹری بھٹائی کالونی کے رہائشی اور نجی کمپنی سے برطرف کیے گئے مزدور غلام مصطفی قنبرانی نے اپنی برطرفی اور بقایا تنخواہیں نہ ملنے کیخلاف چوتھے روز بھی پریس کلب کے سامنے احتجاج جاری رکھا۔ اس موقع پر غلام مصطفی قنبرانی نے بتایا کہ وہ 9 سال تک کو لگیٹ کمپنی میں 12 گھنٹے روزانہ کی بنیاد پر ڈیوٹی دیتا رہا اور کمپنی کی انتظامیہ نے بلاجواز نوکری سے نکال کر بقایا تنخواہیں بھی نہیں دیں جس کی وجہ سے بچوں کی کفالت بھی نہیں کرسکتا اور نوکری سے برطرف ہونے کے بعد اب تک بے روزگاری کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوں۔ انہوں نے بتایا کہ میں 2015ء سے نوکری پر بحالی اور بقایا تنخواہوں کی ادائیگی کے لیے احتجاج کررہا ہوں اور اس دوران مجھے کمپنی کی انتظامیہ سمیت کئی سرکاری افسران نے یقین دہانی کرائی لیکن اس کے باوجود اب تک نوکری پر بحال کیا گیا ہے اور نہ ہی بقایا تنخواہیں ادا کی گئی ہیں۔ انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سمیت مزدور تنظیموں سے اپیل کی کہ کولگیٹ کمپنی کیخلاف کارروائی کرکے تنخواہیں ادا نہ کرنے کا نوٹس لے کر انصاف فراہم کیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ