العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت 13 اگست کو ہوگی ،اڈیالہ جیل حکام کو پیشی کا نوٹس مل گیا 

110

اسلام آباد(نمائندہ جسارت)سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت 13اگست کو ہوگی ، اڈیالہ جیل حکام کو نواز شریف کی پیشی یقینی بنانے کے لیے احکامات جاری کردیے گئے ہیں، اس ضمن میں متعلقہ حکام نے سیکورٹی پلان ترتیب دے دیاہے۔پولیس نے پیشی کے لیے سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لینا شروع کردیاہے ، میڈیا نمائندوں کی محدود تعداد کوکوریج کے لیے کمرہ عدالت لے جایا جائے گا۔پولیسذرائع نے بتایاہے کہ نوازشریف کو اڈیالہ جیل سے بکتربندگاڑی کے ذریعے سخت سیکورٹی حصار میں عدالت لایا جائے گا، قافلے میں جیمرز والی گاڑی اورایمبولینس بھی شامل ہوگی۔احتساب عدالت کے اطراف 500سے زائد پولیس اہلکارتعینات کیے جائیں گے۔کمرہ عدالت اوراحاطے میں داخلے کی اجازت فہرست میں موجود افراد کو دی جائے گی۔ واضح رہے اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس دوسری عدالت منتقل کرنے کی درخواست پر 4صفحات پر مشتمل فیصلے کا تحریری حکم نامہ جاری کردیا ہے۔ عدالت نے فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنسز اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر ایک سے احتساب عدالت نمبر 2 کو منتقل کرنے کا حکم دیا ہے۔عدالتی حکم کے مطابق احتساب عدالت نمبر ایک کی کارروائی جہاں سے رکی ہے وہیں سے ہی کورٹ نمبر2 جاری رکھے۔حکم نامے پر جسٹس عامر فاروق اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب کے دستخط موجود ہیں۔واضح رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے نواز شریف کی نیب ریفرنسز دوسری عدالت منتقل کرنے کی درخواست منظورکرتے ہوئے حکم دیا تھا کہ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر فلیگ شپ انویسٹمنٹ اورالعزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنسز کی سماعت نہیں کرسکتے۔دونوں ریفرنسز کی سماعت اب احتساب عدالت نمبر2 کے جج ارشد ملک کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ