یمنی خانہ جنگی کے خاتمے میں ایران مدد کرسکتا ہے‘ اقوام متحدہ

86
میکسیکو: طیارے کی تباہی کے بعد زخمیوں اور مسافروں کو نکالا جارہا ہے‘ فائربریگیڈ کا عملہ آگ بجھانے کی کوشش کررہا ہے
میکسیکو: طیارے کی تباہی کے بعد زخمیوں اور مسافروں کو نکالا جارہا ہے‘ فائربریگیڈ کا عملہ آگ بجھانے کی کوشش کررہا ہے

صنعا (انٹرنیشنل ڈیسک) اقوام متحدہ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ایرانی حکومت یمن میں جاری خانہ جنگی کے خاتمے میں مدد کے لیے تیار ہے۔ تاہم عالمی ماہرین نے اپنی رپورٹ میں ایرانی معاونت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ تہران حکومت اب بھی حوثی باغیوں کو ڈرون اور بیلسٹک میزائلوں فراہم کر رہی ہے۔ واضح رہے کہ یمنی تنازع میں حوثی باغیوں کو ایران کی جانب سے پشت پناہی حاصل ہے، جب کہ منصور ہادی کو سعودی قیادت میں عرب اتحاد کی مدد حاصل ہے۔دوسری جانب یمن کی سرکاری فوج نے عرب اتحادکی مدد سے مشرقی صنعا میں نہم ڈویژن میں واقع تزویراتی اہمیت کے حامل جبال بیاض پہاڑی سلسلے کو حوثی باغیوں سے آزاد کرالیا۔جبال بیاض میں گھمسان کی لڑائی کے بعد باغی 17لاشیں چھوڑ کر فرار ہوگئے اور علاقے پر فوج نے کنٹرول مضبوط کرلیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ