سیکولر ٹولے اور اسلام پسند قوتوں کے درمیان کل فیصلہ کن معرکہ ہے،سراج الحق 

203
دیر: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق اپنے انتخابی حلقے میں جلسے سے خطاب کررہے ہیں
دیر: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق اپنے انتخابی حلقے میں جلسے سے خطاب کررہے ہیں

لاہور(نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ الیکشن 2018 ء قوم کے پاس کرپٹ مافیا اور عالمی اسٹیبلشمنٹ کے مہروں سے نجات کا سنہری موقع ہے اسے ضائع نہ کریں اور 25 جولائی کو متحدہ مجلس عمل کو ووٹ دے کر نظام مصطفےٰؐ کے نفاذ میں ہمارا ساتھ دیں ۔ موجودہ الیکشن بیرونی اشاروں پر ناچنے والے سیکولر ٹولے اور اسلام پسند قوتوں کے درمیان فیصلہ کن معرکہ ہے ۔ ملک کی نظریاتی اور دفاعی سرحدوں کی حفاظت اور قومی یکجہتی کے فروغ کے لیے ایم ایم اے کی کامیابی ضروری ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنے حلقہ انتخاب لوئر دیر میں انتخابی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ 70 سال سے عوام کی گردنوں پر مسلط ٹولے نے قومی عزت و وقار کو نیلام کیا اور امریکی و مغربی سامرا ج کی خوشنودی کے لیے پاکستان کو اسلام کے بابرکت نظام سے محروم رکھا جس پاکستان کے حصول کے لیے ہمارے بڑوں نے لاکھوں جانوں کا نذرانہ پیش کیا تھا ، حکمرانوں نے اس کے نظریے سے بے وفائی اور غداری کی جس کی وجہ سے پاکستان دولخت ہواا ور ہم اپنے مشرقی بازو سے محروم ہو گئے مگر ذاتی مفادات کے اسیر ٹولے نے اس سانحے سے عبرت پکڑنے کے بجائے باقی ماندہ ملک کو بھی خطرات کے حوالے کر دیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ ان نااہل اور کرپٹ لوگوں سے کسی خیر کی توقع رکھناخود فریبی کے سوا کچھ نہیں ۔ بیرونی ایجنڈے کی تکمیل کے لیے ان لوگوں نے ہمیشہ پاکستان کے مفادات کو پس پشت ڈالا ہے ۔ یہی ٹولہ عوام کی خوشیوں کا قاتل اور محرومیوں کا ذمے دار ہے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل ہی اصل متبادل قوت ہے ، باقی پارٹیوں کو عوام آزما چکے ہیں ۔ عوام نے پیپلز پارٹی اورن لیگ کو ایک یا 2بار نہیں ، 3،3 بار موقع دیا مگر وہ مسائل حل کرنے کے بجائے مسائل پیدا کرتے رہے اور آج یہ صورتحال ہے کہ پاکستان مسائل کی دلدل میں پھنس چکاہے ، عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں اور ان کی نسلیں عیش و عشرت میں مصروف ہیں، یہ لوگ ایک بار پھر بلند و بانگ دعوؤں سے عوام کو دھوکا دینے کی کوشش کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کے کمیشن خوروں نے ہماری آنے والی نسلوں کو بھی قرضوں کی ہتھکڑیوں میں جکڑ دیا ہے ۔ پاکستان پر اتنا قرض ہوگیاہے کہ اس کے سود کی ادائیگی کے لیے مزید قرضے لینے پڑتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ سود کی لعنت میں پھنس کر ان لٹیروں نے قوم کا مستقبل تاریک کردیاہے ۔ متحدہ مجلس عمل سودی معیشت کا خاتمہ کر کے زکوٰۃ و عشر کا پاکیزہ نظام رائج کرے گی اور نوجوانوں کو غیر سودی قرضے دے گی ۔ انہوں نے کہاکہ جب تک بے روزگاری کا خاتمہ نہیں ہوتا ، ملک آگے نہیں بڑھ سکتا ۔ ہم نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے لیے سرکاری محکموں اور صنعتوں میں اسامیاں پیدا کریں گے اور پڑھے لکھے نوجوانوں کو جب تک روزگار نہیں ملتا ، انہیں بے روزگاری الاؤنس دیا جائے گا ۔ انہوں نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل احتساب کے نظام کو بہتر بنائے گی تاکہ کرپٹ اور بددیانت لوگوں کو احتساب سے بچ نکلنے کا موقع نہ ملے ۔ انہوں نے کہاکہ قومی خزانے سے لوٹی گئی دولت ملک میں لاکر ہم عوام کو تعلیم ، صحت اور چھت کی سہولت فراہم کریں گے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ