امیدواروں پرحملے الیکشن کو سبوتاژکرنے کی سازش ہے‘اسد اللہ بھٹو

82
این اے 242 سے مجلس عمل کے امیدوار اسداللہ بھٹو اوکھائی کمپلیکس میں اظہار یکجہتی کررہے ہیں
این اے 242 سے مجلس عمل کے امیدوار اسداللہ بھٹو اوکھائی کمپلیکس میں اظہار یکجہتی کررہے ہیں

کراچی( اسٹاف رپورٹر ) متحدہ مجلس عمل کے مرکزی رہنماء اور این اے 242پر نامزد امیدوار اسداللہ بھٹونے کہا ہے کہ بنوں و ڈی آئی خان میں امیدواروں پرحملے پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار اورانتخابات کو سبوتاژکرنے کی سازش ہے،عوام اپنے اتحاد اورانتخابی سرگرمیوں میں بھرپورشرکت کرکے دشمن قوتوں کی سازشوں کو ناکام بنادیں۔ کراچی کے روشن مستقبل اورمسائل کے حل کے لیے عوام 25جولائی کو دیانتدار قیادت کو ووٹ دیں،ایم ایم اے کی مخلص و دیانتدار قیادت ہی کراچی کی
روشنیوں کو بحال اور مسائل حل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے،سابق میئر عبدالستارافغانی و نعمت اللہ خان کا کام اورکرادر پوری قوم کے سامنے ہے،عوام نے اپنے ووٹ کا درست فیصلہ نہ کیا توپھرآئندہ5 سال تک ہاتھ ملنے کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اوکھائی کمپلیکس، جنجارگوٹھ،یثرب گوٹھ اوراحمدجمال پاڑا ایوب گوٹھ میں کارنرمیٹنگ سے خطاب کے دوران کیا۔پی ایس 99اورپی ایس 100کے امیدواران مولانا محمد غیاث اورمحمد یونس بارائی سمیت مقامی ذمے داران نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ اسداللہ بھٹو نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی اورایم کیوایم نے مل کرسندھ کو تباہ کیا ہے، پیپلزپارٹی مسلسل 10 سال اقتدارمیں رہی مگرعملی طور پر عوام کی خدمت کے بجائے لوٹ مار کے سوا کچھ بھی نہیں کیا،اب تیسری بار سندھ میں اقتدار میں آنے کے دعوے کیے جا رہے ہیں ۔اس لیے عوم ایک بار پھر سبزباغ دکھانے والوں کے بہکاوے میں نہ آئیں،اس بار صرف دیانتدار قیادت کو کامیاب کیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ