حق وباطل کے درمیان معرکہ ہے،ووٹ کی پرچی سے فتح حاصل کرینگے،فضل الرحمن ،سراج الحق

303
مانسہرہ : متحدہ مجلس عمل کے صدر مولانا فضل الرحمن اور امیرجماعت اسلامی پاکستان سراج الحق جلسے سے خطاب کررہے ہیں
مانسہرہ : متحدہ مجلس عمل کے صدر مولانا فضل الرحمن اور امیرجماعت اسلامی پاکستان سراج الحق جلسے سے خطاب کررہے ہیں

لاہور( نمائندہ جسارت) متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمن اور امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے مانسہرہ میں جلسہ عام سے خطاب کیا،مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ آج ملک میں حق و باطل کے درمیان جنگ ہے۔ اقتدار کے لیے ووٹ کی پرچی سے فتح حاصل کریں گے۔ تمام دینی جماعتیں ایک پلیٹ فارم پر جمع ہیں جن قوتوں نے ملک کو 70سالوں میں امن نہیں دیا، ان ناکام لوگوں کو مزید حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں۔ ووٹ سے بڑھ کر کوئی امانت نہیں ایسے ضمیر کے خلاف استعمال نہ کریں۔ عوام اپنے ووٹ کی قوت سے ملک میں نظام مصطفیؐ کے نفاذ کار استہ ہموار کر سکتے ہیں۔ متحدہ مجلس عمل ہی ملکی حالات تبدیل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے جن لوگوں نے قوم کے70 سال ضائع کیے، ان سے کسی تبدیلی کی توقع رکھنا اپنے آپ کو دھوکا دینے کے مترادف ہے۔ جو لوگ بیرونی ایجنڈے پر کاربند ہیں، وہ پاکستان کے عوام کے لیے کچھ نہیں کر سکتے۔ ووٹ کے وزن کو اسلامی نظام کے نفاذ کے پلڑے میں ڈالا جائے۔ ہم اقتدار کے ایوانوں میں ووٹ کی قوت سے پہنچیں گے اب دینی قوتوں کا راستہ روکنے کی کسی میں قوت نہیں،25 جولائی ملک میں اسلامی قوتوں کی فتح کا دن ہوگا۔ امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ25 جولائی کے الیکشن اسلام اور سیکولر قوتوں کے درمیان جنگ ہے۔ ہمارا مقابلہ عالمی اسٹیبلشمنٹ سے ہے جو ایک بار پھر اپنے آلہ کاروں کو اقتدار کے ایوانوں پر مسلط کرنا چاہتے ہیں مگر پاکستان کے غیرت مند اور اسلام پسند عوام اس بار ان کی سازشوں کو ناکام بنادیں گے ۔ حکمرانی کرنے والے ایک بار پھر چہرے اور پارٹیاں بدل کر عوام کو دھوکا دینے کی کوشش کرر ہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مجلس عمل پاکستان میں قرآن و سنت کی بالادستی چاہتی ہے اور ملک میں مدینہ منورہ جیسا نظام قائم کرنے کی جدوجہد کر رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ خوف اور دھمکیوں کے باوجود مانسہرہ میں اتنا بڑا جلسہ کامیاب عوامی شو ہے۔ عوام متحدہ مجلس عمل کو کامیاب کرائیں تاکہ اقتدار میں آ کر ان لٹیروں سے قومی خزانے سے لوٹی گئی ایک ایک پائی وصول کی جائے۔ ہم پاکستان کو خوشحال اور ترقی یافتہ اسلامی ریاست بناناچاہتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل اقتدار میں آکر سودی نظام ختم کردے گی اور اسلامی نظام معیشت رائج کیا جائے گا تاکہ عوام کو سود ،مہنگائی اور ٹیکسوں کے بوجھ سے نجات مل سکے۔ انہوں نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل کامیاب ہو کر قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو امریکی قید سے رہائی دلائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ