ڈالر کے مقابلے میں روپے کی تنزلی نے بھی مسائل بڑھا دیئے ہیں ,افتخار علی ملک

143

کراچی:سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئرنائب صدر اور یونائٹیڈ بزنس گروپ کے چیئرمین افتخار علی ملک نے کہا ہے کہ ملک کا تجارتی خسارہ جس تیزی سے بڑھ رہا ہے وہ مستقبل میں پریشانی کا سبب بن سکتا ہے،ڈالر کے مقابلے میں روپے کی تنزلی نے بھی مسائل بڑھا دیئے ہیں،اس وقت ضرورت ہے کہ ملکی برآمدات میں اجافہ ہو اور یہ تب ہی ممکن ہوگا

ایکسپورٹرز کو انکے سیلزٹیکس ریفنڈز واپس کئے جائیں کیونکہ ریفنڈز نہ ملنے سے ایکسپورٹرز کی مشکلات بڑھ گئی ہیں۔انہوں نے یہ بات گزشتہ شب گورنرہاؤس کراچی میں چھٹے ایف پی سی سی آئی اچیومنٹ ایوارڈ کی تقریب سے خطاب کے دوران کہی۔ تقریب میں نگران وفاقی وزیر برائے تجارت، ٹیکسٹائل ، انڈسٹریز و پروڈکشن میاں مصباح الرحمن،گورنرسندھ محمدزبیر،نگراں صوبائی وزیر اطلاعات وماحولیات جمیل یوسف،یو بی جی کے سیکریٹری جنرل زبیرطفیل،خالدتواب،گلزار فیروز،

نائب صدور ایف پی سی سی آئی وحیداحمد، طارق حلیم،شبنم ظفر، کریم عزیز،اختیار بیگ،عبدالسمیع خان،ملک سہیل،حنیف گوہربھی موجود تھے۔ افتخار علی ملک نے کہا کہ ویلیوایڈیشن پر توجہ دیکر زیادہ زرمبادلہ کمایا جاسکتا ہے،گزشتہ چندسالوں سے ملکی برآمدات جمود کا شکار ہیں۔انہوں نے ایف پی سی سی آئی کے نائب صدروحید احمد کو ہارٹی کلچر وژن پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایکسپورٹ اورینٹیڈ سیکٹر کو سہولیات مہیا کی جائیں۔افتخار علی ملک نے انجینئرنگ ڈیولپمنٹ بورڈکے حوالے سے کہا کہ یہ بورڈ 40سال سے کام کررہا تھا اور اس بورڈ نے ڈیلیشن پروگرام پربھرپور کام کیا بالخصوص ٹریکٹر پر100فیصدڈیلیشن پر کام کیا گیا لیکن افسوس کہ چند بے ایمانوں کی وجہ سے انجینئرنگ ڈیولپمنٹ بورڈکو ختم کردیا گیا

حالانکہ جو لوگ غلط تھے انکا خاتمہ ہونا چاہیئے تھا اس لئے میرا مطالبہ ہے کہ انجینئرنگ ڈیولپمنٹ بورڈکو ختم کرنے کا فیصلہ واپس لیا جائے۔انہوں نے کہا کہ وہ اور ایس ایم منیر ایف پی سی سی آئی میں ملک بھر کی بزنس کمیونٹی کو یکجا کرچکے ہیں اور یو بی جی پاکستان کا مضبوط تجارتی نمائندہ گروپ بن چکا ہے۔ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفربلور نے ایف پی سی سی آئی کی کارکردگی کے حوالے سے صدر پاکستان ممنون حسین کو آگاہ کیا جبکہ سینئرنائب صدر مظہر اے ناصر نے یو بی جی کے سرپرست اعلیٰ ایس ایم منیر کا کینیڈا سے بھیجا گیاپیغام پڑھ کر سنایا۔مظہر اے ناصر نے اپنی تقریر میں کہا کہ قوموں کی ترقی کا دارومدار نئے رجحانات اور ایجادات پر ہے

،فیڈریشن چیمبر نے ریسرچ اور ڈیولپمنٹ پر بھرپور توجہ دی تاکہ کاروبار ترقی کی جانب جاسکے،پاکستان11برکس ممالک میں شامل ہے جو مضبوط معیشت بننے کی اہلیت رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر ملک کا خزانہ خالی ہو تو اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ تجارت وصنعت پر مزید بوجھ ڈال دیا جائے۔بعد ازاں صدر مملکت ممنون حسین نے مختلف شعبوں میں شخصیات کو ایوارڈز اور گولڈ میڈلز دیئے جس میں افتخار علی ملک،زبیرطفیل، خالدتواب، صدر فیڈریشن غضنفربلور،سینئرنائب صدرسیدمظہر علی ناصر،نائب صدورطارق حلیم،زاہد سعید،وحید احمد،شبنم ظفر،حاجی عرفان یوسف،کریم عزیز ملک اور دیگر نائب صدور، ڈاکٹر عبدالقدیر خان،ڈاکٹر ادیب الحسن رضوی،ڈاکٹر عبدالباری خان،ندیم احمدکشتی والا،شجاع الدین احمد،صدر نیشنل بینک آف پاکستان سعید احمد، آصف بشیر،ارشد عباس،فرحان حنیف کا ایوارڈ انکے فرزند زوہیب فرحان،طارق حلیم ومسز طارق حلیم،ڈاکٹر فرحان عیسیٰ عبداللہ،ملک سہیل حسین،میاں اکرم فرید،اشفاق پٹیل،ڈاکٹرندیم قمر،سہیل نذیر،مس امیرہ غوری،شعیب اسماعیل،ارشد جمال،سیما مغل،عمرریحان،ظہیربابر ہاشمی،مس زارا مسعود،معروف بلڈر الطاف تائی،حنیف سلیمان جیوانی،آصف سم سم شامل تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ
mm
قاضی جاوید سینئر کامرس ریپورٹر اور کامرس تجزیہ، تفتیشی، اور تجارتی و صنعتی،معاشی تبصرہ نگار کی حیثیت سے کام کرنے کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں ۔جسارت کے علاوہ نوائے وقت میں ایوان وقت ،اور ایوان کامرس بھی کرتے رہے ہیں ۔ تکبیر،چینل5اور جرءات کراچی میں بھی کامرس رپورٹر اور ریڈیو پاکستان کراچی سے بھی تجارتی،صنعتی اور معاشی تجزیہ کر تے ہیں qazijavaid61@gmail.com