کراچی میں ایل پی جی کا بحران شدت اختیار کرگیا

47
آل حیدر آباد ایل پی جی گیس ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے اراکین احتجاج کررہے ہیں
آل حیدر آباد ایل پی جی گیس ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے اراکین احتجاج کررہے ہیں

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی میں ایل پی جی کا بحران شدت اختیار کرگیا،لوکل پروڈیوسر زنے دانستہ گیس کی قلت پیدا کرکے ایل پی جی کی قیمت بڑھا دی،ایک ہفتے قبل100روپے فی کلو فروخت کی جانے والی گیس 30روپے اضافے سے 130 روپے کلو تک پہنچا دی گئی۔ ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان (سندھ زون)کے سینئرنائب صدر عمران فاروقی نے لوکل پروڈیوسر کی جانب سے دانستہ پیدا کی جانے والی گیس کی قلت کو غریب افراد کے خلاف ایک سازش قرار دیا اورایسوسی ایشن کے چیئرمین عرفان کھوکھر کو پوری صورتحال سے آگاہ کردیا ہے۔تفصیلات کے مطابق کراچی میں ایل پی جی کا بحران پیدا کردیا گیا ہے اور گیس کی قیمت بڑھا کر لوکل پروڈیوسرز اپنی تجوریوں میں کروڑوں روپے بھرنے لگے، قیمت بڑھنے سے ایل پی جی کے2 مقامی پلانٹس نے گیس کی اسٹوریج کرلی تاکہ مزید قیمت بڑھنے پر مارکیٹ میں فروخت کیا جاسکے۔ڈالر کے ریٹ بڑھنے اور ٹیکسز میں اضافے کے سبب درآمدی ایل پی جی کی امپورٹ کم ہوگئی ہے جس کا بھرپور فائدہ اٹھا کر منہ مانگے داموں ایل پی جی فروخت کی جانے لگی ہے۔پورٹ قاسم اور سپرہائی وے پرکئی ایل پی جی پلانٹس بند کردیے گئے،مارکیٹ میں گیس کی شدید قلت نے ایل پی جی استعمال کرنے والے صارفین مجبوراً مہنگی گیس خریدرہے ہیں۔ ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان (سندھ زون)کے سینئرنائب صدر عمران فاروقی نے گیس کی قلت اورقیمت بڑھنے کی تمام تر ذمہ داری لوکل پروڈیوسرز پر عائد کی ہے اورحکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ کراچی میں مہنگے داموں ایل پی جی کی فروخت کو روکا جائے اورمنافع خوروں اور ذخیرہ اندوز ایل پی جی پروڈیوسرز کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ، صارفین کوایل پی جی اصل داموں پر دستیابی کو یقینی بنایا جائے دوسری صورت میں ایل پی جی کی مزیددرآمدبندہونے سے لوکل پروڈیوسرز کوایل پی جی کی قلت پیدا کرنے کا مزید موقع ملے گا۔عمران فاروقی نے کہا کہ ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین عرفان کھوکھرکی جدوجہد ہمیشہ سے صارفین کی جیبوں پر نقب زنی کرنے والی مارکیٹنگ کمپنیوں کے خلاف رہی ہے لیکن اب کئی ایسے عناصر سر اٹھارہے ہیں جو بلیک مارکیٹنگ کے ذریعہ کروڑوں روپے اپنی جیبوں میں بھر رہے ہیں اور اگر حکومت نے ایسے عناصر کے خلاف کارروائی نہ کی توشٹر ڈاؤن ہڑتال پر غور کیا جائے گا جس کی تمام تر ذمہ دار نگراں حکومت ہوگی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ