نواز شریف کا اڈیالہ جیل میں فلاحی کام کرانے کا فیصلہ

218

راولپنڈی: ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ پاکستان کے سابق وزیراعظم نوازشریف نے اڈیالہ جیل میں فلاحی کام کرانے کا فیصلہ کرلیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق احتساب عدالت سے سزا یافتہ سابق وزیراعظم میاں نوازشریف نے اڈیالہ جیل میں فلاحی کام کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے انہوں نے جیل انتظامیہ سے بات چیت بھی کی اوراپنے ذاتی اسٹاف کو جیل میں فلاحی کاموں کا ٹاسک فوری مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔

نوازشریف نے جیل انتظامیہ سے جیل میں موجود جرمانہ ادانہ کرسکنے والوں کی فہرست طلب کرلی جس کے بعد وہ اپنی جیب سے پیسے ادا کرکے قیدیوں کو رہائی دلوائیں گے۔

سابق وزیراعظم نے جیل انتظامیہ سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہ جیل میں پانی کے لیے بورنگ کروائیں گے اور جس قیدی بیرک کے باہرشیڈ نہیں ہے وہ بھی تیار کروائیں گے۔

ڈپٹی سپریٹنڈنٹ جیل نے نواز شریف کے اسٹاف کو تفصیلات فراہم کردیں۔

جیل ذرائع نے کہا کہ جرمانے کی عدم ادائیگی پر جیل میں بند غریب قیدیوں کی فہرست تیار کی جارہی ہے اگر نواز شریف قیدیوں کا جرمانہ ادا کریں گے تو بہت سے قیدیوں کو رہائی مل جائے گی۔

واضح رہے کہ نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ جیل میں ایک ہفتہ ہوچکا ہے، سکیورٹی خدشات کے پیش نظر مریم نواز کو سہالہ ریسٹ ہائوس منتقل کرنے کا فیصلہ گیا تھا تاہم مریم نواز نے تاحال سہالہ ریسٹ ہائوس منتقل ہونے پررضامندی نہیں دی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ