انتخابات کی تشہیری مہم کا این اوسی منسوخ کرناقابل مذمت ہے‘ میاں اسلم 

151
متحدہ مجلس عمل کے امیدوار میاں محمد اسلم ضلعی انتظامیہ کے دفتر کے سامنے پریس کانفرنس کر رہے ہیں
متحدہ مجلس عمل کے امیدوار میاں محمد اسلم ضلعی انتظامیہ کے دفتر کے سامنے پریس کانفرنس کر رہے ہیں

اسلام آباد(نمائندہ جسارت) متحدہ مجلس عمل کے اُمیدوار بر ائے این اے 53،54میاں محمد اسلم نے اسلام آباد میں ضلعی انتظامیہ ڈی آر او اورآر اوکی جانب سے انتخابات کی تشہری مہم کے لیے جاری کیا گیا این او سی کینسل کر نے اورمتحدہ مجلس عمل کی الیکشن مہم میں رکاوٹیں کھڑی کر نے کی شدید الفاظ میں مذمت کر تے ہو ئے اسے پری پول دندھالی قرار دیا ہے ،انہوں نے انتظامیہ کو متنبہ کیا ہے کہ وہ ہمارے صبر کو نہ آزمائیں ورنہ شہر میں پیدا ہو نے والی امن امان کی ذمے داری اسلام آباد انتظامیہ اورالیکشن کمیشن کی ہوگی ، این اے 53،54 میں متحدہ مجلس عمل کے مردو خواتین کار کنان کی گر فتاری آئے روز الیکشن کمیشن کے منظور کردہ متحدہ مجلس عمل کے بینرز اُتارنا ، انتخابی دفاتر سے کار کنان کو گر فتار کر نا اور کار نر میٹنگ کے انعقاد میں رکاوٹ ڈالنا انتخابی دندھالی کی ایک قسم ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی انتظامیہ کے دفاتر جی الیون کے سامنے احتجاجی پر یس کانفر نس کر تے ہو ئے کیا ۔اس موقع پر امیر جماعت اسلامی اسلام آباد نصراللہ رندھاوا،متحدہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل محمد کاشف چودھری سمیت کار کنان کی بڑی تعداد مو جو د تھی ۔میاں محمد اسلم نے کہاکہ ڈی آر اوکی اجازت سے الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کے تحت ڈی ایم اے نے ایک ہفتے کی مشقت کے بعد بینرز لگا نے کے لیے جاری کر دہ این او سی کینسل کر دیا ہے، اس کے فوراََ بعد پورے شہر سے ہمارے بینرز اُتارنا بد نیتی کا مظاہرہ ہے ،ہم الیکشن کمیشن سے پو چھتے ہیں کہ یہ سب کس کے اشارے پر ہو رہا ہے ،انہوں نے کہا اسلام آباد میں آزادانہ ماحول میں الیکشن مہم چلانے کے تمام پُر امن راستے مسدود کر دیے گئے ہیں اور صاف و شفاف الیکشن کے انعقاد کے دعوؤں پر سوالیہ نشان لگا دیا گیا ہے ۔میاں محمد اسلم نے انتظامیہ سے مطالبہ کر تے ہوئے کہا کہ اسلام آباد کے ماحول کو پُر امن رکھنے کے لیے متحدہ مجلس عمل کی انتخابی مہم میں رکاوٹ نہ ڈالی جائے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ