عمران خان کو غلط فہمی ہے کہ سازش کر کے وزیراعظم بن جائیں گے،بلاول 

150
پھالیہ: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول انتخابی ریلی سے خطاب کررہے ہیں
پھالیہ: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول انتخابی ریلی سے خطاب کررہے ہیں

لالہ موسٰی، منڈی بہا الدین (آن لائن،آئی این پی)پیپلز پارٹی کے چےئرمین بلاول زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان سازش کر کے وزیراعظم نہیں بن سکتے اگر انہیں اپنی مقبولیت پر اتنا ہی یقین ہے تو وہ صاف اور شفاف انتخابات سے کیوں بھاگتے ہیں۔پیپلز پارٹی کے نظریے کو پنجاب کے عوام پسند کرتے ہیں اور عمران خان جانتے ہیں کہ وہ الیکشن میں ہمارا مقابلہ نہیں کر سکتے ۔تفصیلات کے مطابق لالہ موسٰی میں پیپلز پارٹی کے چےئرمین بلاول زرداری نے انتخابی مہم کے سلسلے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے
کہا کہ اسلام آباد سے لالہ موسٰی تک جگہ جگہ لوگوں نے پورے جوش و خروش سے استقبال کیا ۔میرا پہلا الیکشن ہے اور میں پنجاب میں نکلا ہوں اور ہمارا سفر صرف الیکشن تک محدود نہیں ہے ۔ تحریک انصاف کے چےئرمین عمران خان کے بارے میں بات کرتے ہوئے بلاول زرداری نے کہا کہ اگر خان صاحب اتنے ہی مقبول ہیں اور ان کے پاس اگر بہت سے لوگوں کی سپورٹ ہے تو اداروں کی طرف سے تحریک انصاف کو خصوصی حمایتیں کیوں مل رہیں ہیں؟ اور خان صاحب صاف اور شفاف انتخابات سے کیوں بھاگتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ عمران خان کی غلط فہمی ہے کہ سازش کرکے وزیراعظم بنیں گے بلکہ اس سازش میں وہ بری طرح ناکام ہوں گے۔، ہم نے پہلے بھی سازشوں کا مقابلہ کیا ہے اور آئندہ بھی کریں گے اور ان سازشوں کے خلاف شواہد لائیں گے۔،عمران خان جانتے ہیں کہ وہ ہمارا مقابلہ نہیں کرسکتے ۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ کٹھ پتلی اتحاد بنانے کی کوششیں ہو رہی ہیں اور کالعدم تنظیموں کا الیکشن لڑنا بھی جمہوریت کی توہین ہے ۔علاوہ ا زیں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے کہا ہے کہ ہمیں اقتدار ملا تو خواتین کو بلاسود قرضے دیں گے۔ خواتین کے لیے یونین کونسل کی سطح پر فوڈ اسٹور کھولیں گے۔ کالعدم تنظیموں کا الیکشن لڑنا جمہوریت کی توہین ہے۔ گالم گلوچ کی سیاست سے مسائل کا حل نہیں نکل سکتا، ہم بینظیر شہید کا غریب عوام سے کیا گیا وعدہ عوام کی طاقت سے پورا کریں گے۔ کٹھ پتلی اتحاد بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ بدھ کو منڈی بہاؤ الدین میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے بلاول زرداری نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ کسان دوست منشور دیا ہے، کسانوں کو رجسٹرڈ کرکے کسان کارڈ دیں گے، بھوک مٹاؤ پروگرام کے تحت عوام کو قرضے دیں گے، خواتین کے لیے یونین کونسل کی سطح پر فوڈ اسٹور کھولیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ