عالمی کپ2018 کے خطاب کیلیے فرانس اور کروشیا کے درمیان جنگ

81

سید پرویز قیصر
عالمی کپ فٹ بال 2018 کے خطاب کے لیے فائنل میچ سابق عالمی چیمپئن فرانس او رکروشیاکے مابین آج ماسکومیں کھیلا جائے گا۔ دونوں ٹیموں کے مابین ہونے والا یہ عالمی کپ میںیہ دوسرا مقابلہ ہوگا‘جب کہ اس کے علاوہ دونوں ٹیمیں 5مرتبہ بین الاقوامی میچ میں آمنے سامنے آچکی ہیں‘ دونوں کے درمیان جو میھ کھیلے گئے ہیں اس میں فرانس نے 3 جیتے ہیں۔ کروشیا نے کوئی میچ نہیں جیتا۔دونوں کے مابین 2 میچ برابر رہے ہیں۔ فرانس نے 9 گول کئے ہیں اور اس کے خلاف 3 گول ہوئے ہیں۔
عالمی کپ کے فائنل راؤنڈ میں دونوں کے درمیان ابھی تک صرف ایک مرتبہ ہوا ہے جس میں فرانس نے کامیابی حاصل کی ہے ۔ 8جولائی 1998کو جب دونوں کے مابین سیمی فائنل میچ ہوا تھا تو فرانس نے ایک کے مقابلے 2 گول سے کامیابی حاصل کی تھی اور فائنل میں داخلہ حاصل کیا تھا۔ فائنل میں اس نے برازیل کوصفر کے مقابلے 3 گول سے شکست دی تھی۔ اس کے علاوہ فرانس 2006 میں بھی فائنل میں داخلہ حاصل کیا تھا تب اسے اٹلی نے پنالٹی شوٹ آؤٹ میں3 کے مقابلے 5 گول سے ہرایا تھا۔ مقررہ وقت تک دونوں ٹیمیں ایک ایک گول سے برابر تھیں۔ فاضل وقت میں کوئی گول نہیں ہوا تھا۔ عالمی کپ میں یہ دوسرا موقع تھا جس خطاب کا فیصلہ پنالٹی شوٹ آوٹ کے ذریعے ہوا۔
کروشیا پہلی مرتبہ عالمی کپ کے فائنل میں کھیل رہی ہے۔ اس سے پہلے اس کی سب سے اچھی کارکرگی1998 میں تیسرا مقام تھی۔ تب اس کو سیمی فائنل میں فرانس نے شکست دی تھی۔ تیسرے مقام کے لئے کھیلے گئے میچ میں کروشیا نے ہالینڈ کو ایک کے مقابلے 2 گول سے شکست دی تھی۔
موجودہ عالمی کپ میں کروشیا نے اپنے سبھی میچوں میں کامیابی کے ساتھ فائنل میں داخلہ حاصل کیا ہے۔ اس نے دوسرے راؤنڈاورکوارٹر ٖفائنل میں پنالٹی شوٹ آؤٹ میں کامیابیاں حاصل کی تھیں جبکہ انگلینڈ کو اس نے سیمی فائنل میں فاضل وقت میں ہرایا تھا۔
کروشیا جس کی آبادی لگ بھگ42 لاکھ ہے، عالمی کپ کے فائنل میں داخل ہونے والی دوسرے سب سے چھوٹے ملک کی ٹیم ہے۔ عالمی کپ میں داخل ہونے والی سب سے چھوٹے ملک کی ٹیم یوروگوئے ہے۔ اس نے 1930 میں اپنے گھر پر ارجنٹائن کو 2 کے مقابلے 4 گول سے ہراکر خطاب اپنے نام کیا تھا۔ 1930 میں یوروگوئے کی آبادی18 لاکھ70 ہزار تھی۔ اس نے جب برازیل میں1950 میں دوسری مرتبہ برازیل کو ایک کے مقابلے 2 گول سے ہراکر خطاب حاصل کیا تھا تو اسکی آبادی 22 لاکھ اور 30 ہزار تھی۔
اسی عالمی کپ میں آئس لینڈ نے شرکت کرکے عالمی کپ کے فائنل راؤنڈ میں کھیلنے والی سب سے چھوٹے ملک کی ٹیم ہونے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔ اس نے3 میچوں میں سے 2 میں شکست کھائی اور ایک میچ برابر کھیلا۔ آئس لینڈ کی آبادی335,000 افراد پر مشتمل ہے۔
کروشیا نے ابھی تک کوئی بڑا ٹورنامنٹ نہیں جیتا جبکہ فرانس نے 1998 میں عالمی کپ جیتنے کے علاوہ 2 مرتبہ یورپین کپ بھی اپنے نام کیا ہے۔ اس نے ایسا1984 میں اپنے گھر پر اور2000 بلجیم اور ہالینڈ میں مشترکہ طور پر ہوئے ٹورنامنٹ میں کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ