انتخابی امیدواروں پر حملے تشویشناک ہیں، آصف زرداری

46

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ملک کی سیاسی جماعتوں نے سابق وزیراعلیٰ اکرم خان درانی اور مستونگ میں سراج رئیسانی کے قافلے پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے قیمتی جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ سابق صدرآصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ انتخابی مہم کے دوران امیدواروں پر حملے تشویشناک ہیں۔ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے سراج رئیسانی سمیت دیگربے گناہ افراد کی شہادت پر گہرے افسوس کا اظہارکیا اورکہا کہ امیدواروں پر دہشتگرد حملے بہت خطرناک ٹرینڈ ہے۔ کسی اور ملک میں ایسے حالات ہوتے تو اس کی پہلی ترجیح یقیناً مجموعی صلاحیت یکجا کرنا ہوتی۔ مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد نے کہا کہ الیکشن مہم کے دوران پے در پے حملے الیکشن سبوتاژ کرنے کی سازش اور جمہوریت پر شب خون ہے جسے روکنے میں حکومت اور سیکورٹی ادارے مکمل طور پر ناکام نظر آتے ہیں۔متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما ڈاکٹرفاروق ستار اور خواجہ اظہارالحسن کا کہنا تھا کہ انتخابی مہم کے دوران دہشت گردی کے واقعات نگراں حکومت کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ اسپیکرسندھ اسمبلی آغاسراج درانی نے کہاکہ انتخابات سے قبل جمہوریت کی بقاء کے لیے سرگرم سیاسی قائدین اور کارکنان خون میں نہلائے جارہے ہیں۔ سابق گورنر ڈاکٹر عشرت العباد خان نے مستونگ دھماکے میں معصوم جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور غم کا اظہارکیا ۔ مسلم لیگ فنکشنل سندھ کے جنرل سیکریٹری اور جی ڈی اے کے انفارمیشن سیکریٹری سردار عبدالرحیم اورسنی تحریک کے سربراہ ثروت اعجازقادری نے مستونگ میں بم دھماکے میں سراج رئیسانی سمیت دیگر کی شہادت پر گہرے افسوس کا اظہار کیا اورکہا کہ امیدواران پر دہشتگرد حملے خطرناک رجحان ہے اور ملک کو بدنام کرنے کی ایک بڑی سازش ہے۔ سیاسی رہنماؤں کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے حالیہ واقعات اورمنظم حملوں کے بعد سیاسی جماعتوں کو متفقہ لائحہ عمل ترتیب دینا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ