فیفا ورلڈکپ‘تیسری پوزیشن کیلیے آج انگلینڈ اور بلجیم مدمقابل ہونگے

142

لوزنیکی (جسارت نیوز) عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ کا چیمپئن کون ہوگا؟ فرانس اور کروشیا کے درمیان ورلڈ کپ فٹ بال ٹورنامنٹ کا فائنل کل روس کے دارلحکومت ماسکو کے لوزنیکی اسٹیڈیم میں کھیلا جائیگا، فائنل میچ پاکستان کے معیاری وقت کے مطابق رات8 بجے شروع ہوگا، میگا ایونٹ اختتامی مرحلے میں داخل، فرانس فٹ بال کی تاریخ میں تیسری مرتبہ فائنل میں پہنچ گیا جبکہ کروشیا کی ٹیم نے پہلی مرتبہ میگا ایونٹ کا فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کرلیا، اس سے قبل فرانس نے میگا ایونٹ کے پہلے سیمی فائنل میچ میں بلجیم کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 1-0 سے شکست دیکر فائنل تک رسائی حاصل کی جبکہ دوسرے سیمی فائنل میچ میں کروشیا نے ایک مرتبہ کی عالمی چیمپئن انگلینڈ کو ایک کے مقابلے میں 2 گول سے شکست دیکر فٹ بال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ میگا ایونٹ کا فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔ فرانس کی ٹیم اس سے قبل ایک مرتبہ میگا ایونٹ اپنے نام کر چکی ہے، فرانس نے 1998ء میں پہلی مرتبہ برازیل کو شکست دیکر عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ جیت تھا، اس کے بعد 2006ء کے عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ میں اس کو اٹلی کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور اب 2018ء کے عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ کے فائنل میں پہنچ چکی ہے اور اب کروشیا کی ٹیم کو پہلی جبکہ فرانس کو دوسری مرتبہ عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ جیتنے کا سنہری موقع ملا ہے، دونوں ٹیموں کے کپتانوں نے میگا ایونٹ کا ٹائٹل جیتنے کے حوالے سے بیان دیا ہے اور توقع کی جارہی ہے کہ دونوں ٹیموں کے درمیان عالمی کپ فٹ بال ٹورنامنٹ کا فائنل میچ انتہائی سخت اور کانٹے دار ہوگا۔ شائقین فٹ بال کو بہت اچھا فائنل میچ دیکھنے کو ملے گا۔ انتظامیہ کے مطابق فائنل میچ کے حوالے سے تمام تر تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں۔دوسری طرف فیفا عالمی کپ میں تیسری اور چوتھی پوزیشن کیلئے بلجیم اور انگلینڈ کے درمیان آج جوڑ پڑے گا، دونوں ٹیمیں شام 7 بجے میدان میں اتریں گی۔شائقین کو سنسنی خیز مقابلے کا شدت سے انتظار ہے۔ فیفا ورلڈ کپ کے فائنل سے پہلے تیسری پوزیشن کے لیے جنگ آج بلجیم او ر انگلینڈ کے درمیان ہوگی۔ بلجیم اور انگلینڈ کی ٹیموں میں آج زور کا جوڑ پڑے گا۔ اہم مقابلے میں انگلینڈ کو ایک بار پھر ایونٹ کے ٹاپ اسکورر ہیری کین سے امیدیں وابستہ ہیں۔بلجیم کے ایڈن ہیزرڈ مخالف ٹیم کیلیے درد سر ہوں گے، شائقین کو کانٹے کے مقابلے کا شدت سے انتظار ہے۔ دوسری طرف انگلش شائقین نے اپنی ٹیم سے ایک مرتبہ پھر امیدیں باندھ لیں ہیں اور انگلش ٹیم بھی شائقین کی امیدوں پر پورا اترنے کے لیے بھرپورپریکٹس میں مصروف ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ