بلدیہ فیکٹری کیس:مختلف تھانوں کے 5پولیس افسران کے بیانات قلمبند

45

کراچی (اسٹاف رپورٹر)انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں مختلف تھانوں کے5پولیس افسران کے بیانات قلم بند کرنے کے بعد سماعت 21جولائی تک ملتوی کردی ، فاضل عدالت نے آئندہ سماعت پر مقدمے کے مزید گواہان کو طلب کرلیا ہے ۔جمعے کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت کے موقع پر ایم کیوایم
کارکن و مرکزی ملزم رحمان بھولااور زبیر چریا سمیت دیگر کو پیش کیا گیا ،اس موقع پر مختلف تھانوں کے 5 پولیس افسران کے بیانات قلم بند کیے گئے ، گواہ پولیس افسران نے اپنے بیانات میں کہا کہ بلدیہ فیکٹری میں آتشزدگی کے بعد لاشوں کو جمع کیا گیا تھا اور بیشتر لاشیں بری طرح جھلس چکی تھیں جبکہ بیشتر لاشوں کو ٹکڑوں کی صورت میں حاصل کیا گیاتھا ،اس کے علاوہ کسی لاش کی ٹانگ اور کسی کے بازو بھی حاصل کیے گئے اور جسم کے ایک پارٹ کو بھی لاش تصور کیا گیاہے جبکہ کئی لاشوں کی شناخت موبائل فون ریکارڈ سے کی گئی،لاشوں کو تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے بھیجا گیا۔سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں اب تک 65 گواہوں کے بیانات قلم بند ہو چکے ہیں۔بعدازاں عدالت نے گواہان کے بیانات کرنے کے بعد سماعت 21جولائی تک ملتوی کردی ۔واضح رہے کہ سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں 720 گواہوں کو نامزد کیا گیا ہے۔
سانحہ بلدیہ کیس

Print Friendly, PDF & Email
حصہ