جھوٹی خبریں روکنے کے لیے واٹس ایپ کا نیا فیچر

116

واٹس ایپ نے گروپس میں گردش کرنے والی جھوٹی خبروں اور سنسنی خیز افواہوں کے روک تھام کے لیے نئے فیچر پر کام کرنا شروع کردیا ہے جو ایسی خبروں کو جانچ پڑتال کے بعد ’ریڈ مارک‘ کردے گا۔
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق تصاویر، وڈیوز اور پیغام رسانی کی معروف موبائل ایپلی کیشن ’واٹس ایپ‘ کی انتظامیہ نے اپنے پلیٹ فارم سے جھوٹی اور بے بنیاد خبروں کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے ایک نئے فیچر کی تیاری پر کام شروع کردیا ہے جسے مختصر لنک سے مناسبت کی بنا پر (مشکوک لنک کی خصوصیت) کا نام دیا گیا ہے۔ٹیکنالوجی سے متعلق معروف ویب سائٹ ’ویب بیٹا انفو‘ کے مطابق یہ فیچر واٹس ایپ گروپ پر موصول ہونے والی کسی بھی مختصر اور مشکوک لنک والی خبر کی حقیقت جاننے کے لیے پہلے خود اُس لنک کے ذریعے اصل ویب سائٹ پر جاکر جانچ پڑتال کرے گی اور اگر خبر درست نہ ہوئی تو لنک پر سرخ رنگ کا لیبل نمایاں ہوجائے گا اس طرح صارف سرخ رنگ سے نشان دہ لنک کو نظر انداز یا حذف کرسکیں گے۔
یہ فیچر واٹس ایپ صارفین کے لیے جلد دستیاب ہوگی اور یہ واٹس ایپ کے 2.18.204 بیٹا ورژن پر کار آمد ہوگی۔ واٹس ایپ نے یہ اقدام حال ہی میں بھارت میں بچوں کے اغوا کی جھوٹی خبروں اور وڈیوز کے پھیلاؤ کے بعد اُٹھایا۔ ان افواہوں سے لوگوں میں اشتعال پھیل گیا تھا اور مختلف واقعات میں مشتعل ہجوم نے درجن بھر مشکوک نوجوانوں کو بنا تحقیق کے اغواکار سمجھ کر بہیمانہ تشدد کے بعد ہلاک کردیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ