امن کیلیے خطے کے تمام ممالک افغانستان میں عدم مداخلت پر اتفاق کریں ،لیاقت بلوچ

99

لاہور( نمائندہ جسارت )جماعت اسلامی پاکستان اور متحد ہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ افغانستان میں امن کے لیے امریکا اور نیٹو فوج افغانستان سے نکل جائیں اور خطے کے تمام ممالک افغانستان میں عدم مداخلت پر اتفاق کرکے عالمی استعمار کا آلہ کار بننے سے انکار کردیں‘امریکا ‘ اسرائیل اور بھارت گٹھ جوڑ اور عزائم سے پوری دنیا کو خطرات لاحق رہیں گے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے اپنے انتخابی حلقے این اے 130 میں عوامی افطار پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر کشیدگی ختم کرنے کے لیے کئی اہم اقدامات ہورہے ہیں ۔ روس ، چین پاکستان کےبڑھتے تعلقات اور امریکا و شمالی کوریا قیادت کی ملا قات بہت اہم ہیں لیکن پوری دنیا اور خطہ کو امریکا ، اسرائیل اور بھارت کے ناپاک گٹھ جوڑ اور عزائم سے خطرات لاحق رہیں گے ۔مسئلہ کشمیر اور فلسطین حل ہونے سے عالمی امن بحال ہوگا۔ انہوں نے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے دورۂ افغانستان میں افغان صدر ، چیف ایگزیکٹو اور امریکی کمانڈر سے ملاقاتوں کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان حکومت اور طالبان میں محدود سیز فائر مثبت پیش رفت ہے ۔ خطہ اور افغانستان میں امن کاحل ایک ہی ہے کہ امریکا اور نیٹو فورسز افغانستان سے نکل جائیں اور خطہ کے تمام ممالک عدم مداخلت پر اتفاق اور عالمی استعمار کے آلہ کار بننے سے انکار کردیں ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل نے عام انتخابات میں بھر پور حصہ لینے کے لیے قومی اور صوبائی امیدواران کے فیصلے کرلیے ہیں ۔ مرکزی پارلیمانی بورڈ کی ہدایت پر صوبائی پارلیمانی بورڈ امیدواران کے کاغذات نامزدگی اور متحدہ مجلس عمل کے حلف نامہ کی تفصیلات پر حتمی کام کر رہے ہیں ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ رمضان المبارک کی مقدس راتوں ، مبارک ایام ، عبادات ، اعتکاف اور ریاضتوں سے پورا پاکستان اور پوری امت مستفید ہوئی ہے ۔ اتحاد امت اور دکھی انسانیت کے دکھ درد کا احساس پیدا ہوا ہے ۔ ماہ رمضان کا اصل پیغام اللہ کے احکامات کے سامنے جھک جانااور نظام مصطفےٰؐ و اتحاد امت کی فضا پیدا کرنا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email