پشاور، کے پی کے فوڈ اتھارٹی کے چھاپے، متعدد کارخانے سربمہر

57

پشاور (آئی این پی) خیبر پختونخوا فوڈ اتھارٹی نے عید سے قبل بیکریوں، مشروبات اور حلوائیوں کیخلاف خصوصی کارروائی کرتے ہوئے صوبے کے مختلف اضلاع میں چھاپوں کے دوران دس لاکھ کے جرمانے عائد کردیے ہیں جبکہ بھاری مقدار میں مضر صحت اشیا خورونوش کو تحویل میں لے کر ضائع کیا گیا جبکہ 15 بیکریوں اور دو مشروبات فیکٹریوں کو حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پر تالے لگائے گئے ہیں۔ ترجمان کے پی فود اتھارٹی عطااللہ خان کے مطابق پشاور میں فوڈ اتھارٹی کی ٹیم خصوصی کریک ڈاؤن کے دوران آٹھ بیکریوں کو سیل کردیا جبکہ تین سو کلو سے زائد ملاوٹی بیکری کو تلف کردیا۔ ٹیم نے دلہ زاک، ورسک اور رنگ روڈ، گلبہار، پشاور صدر، حیات آباد اور یونیورسٹی روڈ پر واقع مختلف بیکریوں پر چھاپے مارے اور بیکریوں کی خستہ حالی اور خراب خام مال کے استعمال ہر متعدد بیکریوں کیخلاف کارروائی کی اور خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف پانچ لاکھ کے جرمانے عائد کردیے۔ ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ مردان میں فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے جعلی مشروبات کی فیکٹری پر چھاپا مارکر ہزاروں لیٹر مضر صحت مشروبات ضائع کرکے فیکٹری کو سیل کردیا جبکہ بنوں میں بھی فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے کارروائی کرتے ہوئے ایسی ہی ایک فیکٹری کو سیل کردیا جو کہ جعلی مشروبات بنارہی تھی۔ترجمان کے مطابق سوات میں بھی فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے تینوں تحصیلوں میں خصوصی آپریشن کے دوران تین بیکریوں کی چیکنگ کی جس میں پانچ بیکریوں کو سیل کردیا جبکہ دو لاکھ کے جرمانے بھی عائد کردیے ہیں۔ ادھر ڈی آئی خان میں حلوائیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کے دوران دس حلوائیوں کی چیکنگ ہوئی اور حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پر دو حلوائیوں پر ڈیڑھ لاکھ کے جرمانے عائد کردیے گئے۔ دوسری جانب کوہاٹ میں لاچی اور سٹی میں بھی متعدد بیکریوں کی چیکنگ ہوئی جس کے دوران پانچ بیکریوں کو سیل کردیا گیا جبکہ تین لاکھ روپے کے جرمانے بھی عائد کردیے گئے۔ترجمان کے پی فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ عوام کو معیاری اور صحت مند خوراک کی فراہمی کے لیے عید کریک ڈاؤن جاری رہے گا جس کے لیے ایمرجنسی نمبروں کا اجرا بھی کیا گیا جبکہ فوڈ اتھارٹی کے تمام دفاتر عید میں بھی فعال رہیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ