خیرپور، پیر جو گوٹھ میں 3 لڑکیوں سے اجتماعی زیادتی، 4 ملزمان گرفتار

70

خیرپور (نمائندہ جسارت) پیر جوگوٹھ میں 3 معصوم لڑکیوں کو 6 سفاک ملزمان نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، لڑکیاں کھیت میں مویشیوں کے لیے گھاس کاٹ رہی تھیں کہ زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، معاملہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد پولیس کو ہوش آیا، با اثر ملزمان کا متاثرہ لڑکیوں کے ورثا پر خاموش رہنے کے لیے دباؤ، پولیس نے کارروائی کرکے 4مرکزی ملزمان کو گرفتار کرلیا، دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج، ملزمان انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش، عدالت نے ملزمان کو چار روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔ خیرپور کے علاقے پیرجوگوٹھ میں 3معصوم لڑکیوں 13سالہ لطیفاں ،میداں اور سونی کو وحشی صفت 6درندوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا، تینوں لڑکیاں کھیتوں میں مال ،مویشیوں کے لیے گھاس کاٹ رہی تھیں کہ 6ملزمان نے کھیتوں میں موجود لڑکیوں کو سخت تشدد کا نشانہ بناکر اپنی ہوس کا شکار بنایا۔ واقع کے بعد ملزمان موقع سے فرار ہوگئے اور متاثرہ لڑکیوں کے ورثا پر معاملے نہ اٹھانے کے لیے دباؤ ڈالتے رہے مگر متاثرہ لڑکیوں نے گھر پہنچ کر اپنے ورثا کو تمام معاملے سے آگاہ کیا، لڑکیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا معاملہ سوشل میڈیا پر آنے کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے مختلف مقامات پر چھاپے مارکر واقع میں ملوث 4 ملزمان امجد، عبدالشکور، سارنگ اور ثنا اللہ کو گرفتار کرکے دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے جبکہ 2ملزمان تاحال گرفتار نہیں ہوسکے ہیں۔ پولیس کی جانب سے گرفتار چاروں ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا جس کے بعد عدالت کی جانب سے چاروں ملزمان کو چار روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ