احتجاج کے بجائے جامعہ کی ترقی کیلیے کام کرنا چاہیے،شیخ الجامعہ

49

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد اجمل خان نے کہا ہے کہ کسی بھی شعبے کی ترقی میں ملازمین کا کردار بڑی اہمیت کا حامل ہوتاہے ،ہمیں دھرنوں اور احتجاج میں وقت ضائع کرنے کے بجائے جامعہ کراچی کی ترقی کے لیے کام کرناچاہیے اور مل بیٹھ مسائل کو حل کرنے کی ضرورت ہے۔جامعہ کراچی کے نامساعد مالی حالات کے باوجود میری پوری کوشش ہوتی ہے کہ جامعہ کے تمام ملازمین کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جائیں ۔ ادارے کی اصل طاقت ملازمین ہیں اور ملازمین کو
چاہیے کہ وہ محنت ،لگن اور ایمانداری سے اپنے فرائض منصبی سرانجام دیں اور ادارے کی ساکھ کو بحال کرنے کے لیے میرا بھرپور ساتھ دیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے شعبہ جاتی ترقی کمیٹی کی سفارشات پر افسران کو دی جانے والی ترقی کے خطوط کی تقسیم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب کا اہتمام وائس چانسلر سیکرٹریٹ جامعہ کراچی میں کیا گیا تھا۔تقریب میں 9 افسران کو گریڈ 20 میں ترقی ،28 افسران کو گریڈ 19 اور 5 افسران کو گریڈ 18 میں ترقی دی گئی ۔شیخ الجامعہ ڈاکٹر اجمل خان نے مزید کہا کہ جس ادارے میں ملازمین سے کام لیا جائے مگر ان کو ان کے جائز حقوق بشمول ترقی اور دیگر مراعات سے محروم رکھا جائے ،ایسے ملازمین مایوس ہوکر ادارے کی ترقی میں اپنا کردار اداکرنے سے قاصر رہتے ہیں۔صرف وہ ہی ادارے کامیاب ہوتے ہیں جن میں ملازمین کو ان کی خدمات اور صلاحیتوں کا جائز صلہ ملتاہے،میری بطور سربراہ ادارہ یہ ذمے داری ہے کہ جامعہ کے ایک ایک ملازم کے حقوق کا تحفظ کروں اور انہیں ان کے جائز حقوق کی فراہمی کو یقینی بناؤں ۔مجھے امید ہے کہ میری اس کاوش کو ملازمین قدر کی نگاہ سے دیکھیں گے اور ذاتی فائدے یا مراعات کے بجائے ادارے کی ترقی کو فوقیت دیتے ہوئے شب وروز جانفشانی سے اپنی ذمے داریاں مزید دیانت داری اور فرض شناسی سے اداکریں گے۔اس موقع پر رجسٹرار جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر ماجد ممتاز،رئیس کلیہ علم الادویہ پروفیسر ڈاکٹر اقبال اظہر،رئیس کلیہ نظمیات وانتظامی علوم پروفیسر ڈاکٹر طاہر علی،اراکین سنڈیکیٹ سید غفران عالم،ڈاکٹر صالحہ رحمن اورڈاکٹر محسن علی بھی موجودتھے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ