ختم قران پرحرمین شریفین میں 20 لاکھ سے زائد کااجتماع

108
مکہ مکرمہ: حرمین ا لشریفین میں ختم قرآن کے اجتماع کے روح پرور مناظر
مکہ مکرمہ: حرمین ا لشریفین میں ختم قرآن کے اجتماع کے روح پرور مناظر

مکہ المکرمہ (سید مسرت خلیل) رمضان المبارک کی29 ویں شب کو مسجد الحرام مکہ مکرمہ اور مسجد نبوی میں ختم قرآن کے روح پرور اجتماع ہوئے۔ سعودی عرب پریس ایجنسی کے مطابق خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز ال سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نائب وزیر آعظم و وزیر دفاع کی سیکورٹی کے بہترین انتظامات میں20 لاکھ سے زائد فرزندان اسلام کو تراویح کے موقع پر ختم قرآن کی عظیم سعادت نصیب ہوئی۔ سعودی عرب کے تمام 13صوبوں، شہروں، قصبوں اور دیہات سے ملکی و غیر ملکی لاکھوں مسلمان حرمین شریفین پہنچے۔ ان میں پاکستان، بھارت اور بنگلا دیش کے شہری بھی کثیر تعداد میں موجود تھے۔ سیکورٹی انتظامات میں ٹریفک، شہری دفاع، حرمین شریفین انتظامیہ، صحت، دینی آگہی، اسکاؤٹس، وزارت تجارت و سرمایہ کاری اور میونسپلٹیوں کے عہدیداران پیش پیش تھے جبکہ مدینہ منورہ میں گورنر شہزادہ فیصل بن سلمان جملہ اجتماعات کی نگرانی خود کر رہے تھے۔ نماز تراویح کی امامت حرم مکی شریف کے امام و خطیب شیخ عبدالرحمن السدیس نے کی۔ جنہوں نے مبارک رات میں ختم قرآن پر ایمان افروز دعاؤں کا اہتمام کیا، جن میں مسلمانوں کے درمیان فرقہ وارانہ مسلکی جھگڑوں کے فتنوں سے نجات دلانے اور مسلمانوں کے درمیان کامل اتحاد کی دعائیں، مسلمانوں اور اسلام کے خلاف چلائی جانے والی میڈیا مہم کے خطرناک نتائج مہم چلانے والوں پر الٹنے کی دعا، مسلمانوں کے خلاف سازشوں اور فتنہ انگیزیوں سے نجات دلانے کے لیے بھی دعائیں مانگیں۔ انہوں نے دعاکی کہ مسلمانوں کو زندگی کے ہر شعبے میں حکم الٰہی کے تقاضے پورے کرنے والا بنا دے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ