بنگلا دیش میں لینڈ سلائڈ نگ،13روہنگیا مہاجر جاں بحق

94
ڈھاکا: کاکسس بازار کیمپ میں بارش کے باعث لینڈ سلائڈنگ سے راستہ تباہ ہوگیا ہے‘ روہنگیا بچے اور خواتین کیچڑ میں نصب ٹینٹ تلے کھڑے ہیں
ڈھاکا: کاکسس بازار کیمپ میں بارش کے باعث لینڈ سلائڈنگ سے راستہ تباہ ہوگیا ہے‘ روہنگیا بچے اور خواتین کیچڑ میں نصب ٹینٹ تلے کھڑے ہیں

ڈھاکا (رپورٹ: منیب حسین) پیش گوئی کے عین مطابق بنگلادیش میں مون سون کا موسم روہنگیا پناہ گزینوں کیلیے تباہی کا سامان لے کر آیا ہے۔ خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق پیر اور منگل کے روز بنگلادیش میں شدید بارش کے باعث لاکھوں روہنگیا پناہ گزینوں کے کیمپوں میں مٹی کے تودے گرنے سے کم از کم 13مہاجر جاں بحق ہوگئے۔ مقامی حکام کا کہنا ہے کہ ہولناک حادثہ چٹاگانگ ڈویژن کی تحصیل نانیارچر میں پیش آیا، جہاں مرنے والے 11مہاجرین میں ایک ہی خاندان کے 4 افراد شامل ہیں، جب کہ کئی تاحال مٹی تلے دبے ہونے کے باعث لاپتا ہیں۔ اسی طرح ضلع کاکسس بازار میں بھی ایک روہنگیا مہاجر مون سون کی بارش کی نذر ہوا۔ واضح رہے کہ رواں ہفتے بارش اور لینڈسلائڈنگ کی وجہ سے مجموعی طور پر 13روہنگیا مہاجر جاں بحق ہوچکے ہیں۔ پیر کے روز کٹپلانگ مہاجر کیمپ میں مٹی کا تودا گرنے سے ایک لڑکا جاں بحق ہوگیا تھا۔ مقامی حکام اور امدادی تنظیموں کا کہنا ہے کہ بنگلادیش میں پناہ گزیں لاکھوں روہنگیا مہاجرین میں سے کم از کم 2لاکھ خطرناک پہاڑیوں اور ٹیلوں کے قریب مقیم ہیں، اور ان کی زندگیوں کو خطرات لاحق ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ ہفتے کے روز سے شروع ہونے والی بارش کے نتیجے میں 300خیمے بھی تباہ ہوچکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ