سپریم کورٹ نے شیخ رشید کو اہل قرار دے دیا

232

سپریم کورٹ نے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کی نااہلی سے متعلق  مسلم لیگ (ن) کے رہنما شکیل اعوان کی درخواست خارج کرتے ہوئے شیخ رشیدکو اہل قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے ایک کے مقابلے میں دو کے تناسب سے مسلم لیگ (ن) کے رہنما شکیل اعوان کی درخواست خارج کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کو اہل قراردے دیا۔ فیصلے کی روسے شیخ رشید 2018 کے انتخابات میں حصہ لے سکتے ہیں

فیصلے میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا اختلافی نوٹ بھی شامل ہے جس میں انہوں نے لکھا ہے کہ اس معاملے پر فل کورٹ بنایا جائے۔

واضح رہے کہ شیخ رشید کی نااہلی کے لیے درخواست مسلم لیگ (ن) کے رہنما شکیل اعوان نے دائر کی تھی جس میں ان پر 2013 کے انتخابات کے دوران کاغذات نامزدگی میں اثاثے چھپانے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔لیگی رہنما کی درخواست پرجسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نےکیس کی سماعت کی تھی اور20 مارچ کو فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

 شکیل اعوان کا مؤقف تھا کہ شیخ رشید نے 2013 کے عام انتخابات کے دوران کاغذات نامزدگی میں اپنے اثاثے چھپائے۔ شیخ رشید نے گھر کی قیمت ایک کروڑ 2 لاکھ ظاہر کی جب کہ اس گھر کی بکنگ ہی 4 کروڑ80 لاکھ سے شروع ہوئی تھی۔ عدالت کے روبرو شیخ رشید نے اسے اپنی غلطی تسلیم کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں