ترکی سے یونان جانے کی کوشش میں 7 افغان مہاجر جاں بحق

36

انقرہ (انٹرنیشنل ڈیسک) ترکی سے سمندر کے راستے یونان جانے کی کوشش میں 7افغان مہاجرین ہلاک ہو گئے۔ ترک ساحلی محافظوں نے بتایا کہ ہلاک شدگان میں3 بچے بھی شامل ہیں۔ خبر رساں ادارے کے مطابق ترک ساحلی حکام نے بتایا کہ ایک کمزور کشتی کا سہارا لیتے ہوئے یہ مہاجرین ترکی سے یونان جانے کی کوشش میں تھے کہ ان کی کشتی الٹ گئی۔ اس حادثے کے نتیجے میں 7 مہاجرین ڈوب گئے ،جن کی ہلاکت کی تصدیق کر دی گئی ہے۔ ترک ساحلی محافظوں کے مطابق ہلاک ہونے والے تمام افراد کا تعلق افغانستان سے تھا، جن میں3 بچے بھی شامل ہیں۔ ذرارئع کے مطابق حادثے کی اطلاع ملتے ہی ترکی کے مغربی صوبے چناق قلعے سے ایک امدادی ہیلی کاپٹر اوکشتی فوری طور پر روانہ کر دی گئی، جس نے 13 افراد کو زندہ بچا لیا۔ ترک حکام کی طرف سے جاری کیے گئے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ بچائے جانے والے افرا د میں مشتبہ انسانی اسمگلر بھی شامل ہے۔ حکام کے مطابق اسمگلر کا تعلق مبینہ طور پر ایران سے ہے۔ ترک خبررساں ادارے اناطولیہ نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا کہ حادثے کا شکار ہونے والی کشتی یونانی جزیرہ لیسبوس جانے کی کوشش میں تھی۔ عمومی طور پر یہی جزیرہ سمندری راستے سے ترکی سے یونان جانے والے مہاجرین کی پہلی منزل ہوتا ہے۔ لیسبوس میں مہاجرین کی ایک بڑی تعداد موجود ہے، جہاں وہ انتہائی ابتر حالت میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔
ترکی /افغان مہاجرین

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں