سالانہ امتحانات کے پہلے مرحلے کا اختتام آج ہورہا ہے،اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ

31

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی نے اعلان کیا ہے کہ انٹرمیڈیٹ گیارہویں اور بارہویں جماعتوں کے سالانہ امتحانات برائے 2018ء کے پہلے مرحلے میں سائنس پری انجینئرنگ، پری میڈیکل، سائنس جنرل، کامرس ریگولر، کامرس پرائیویٹ ، ہوم اکنامکس اور میڈیکل ٹیکنالوجی کے امتحانات کا اختتام 18مئی کو ہورہا ہے جس کے بعد 19مئی سے دوسرے مرحلے کا آغاز ہوجائے گا،7جون تک جاری رہنے والے امتحانات کے دوسرے مرحلہ میں آرٹس ریگولر، آرٹس پرائیویٹ، خصوصی امیدواروں اور ڈپلوما ان فزیکل ایجوکیشن کے امتحانات ہوں گے، ان امتحانات میں صبح کی شفٹ میں
ساڑھے نو سے ساڑھے بارہ بجے تک ہونے والے پرچوں میں مجموعی طور پر 43 ہزار 994امیدوار شریک ہوں گے، جس میں طلبہ کی تعداد 10297 جبکہ طالبات کی تعداد 33697 ہے، انٹرمیڈیٹ کے سالانہ امتحانات برائے 2018ء کے دوسرے مرحلہ کیلیے 64 امتحانی مراکز قائم کیے گئے ہیں۔ انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کے پہلے مرحلے میں پرامن اور شفاف طریقے سے امتحانات کا انعقاد ہوا، بورڈ کی طرف سے سپرویجی لینس ٹیموں کے کام کا طریقہ کار تبدیل کرنے کی وجہ سے امتحانات میں نقل کے رجحان میں واضح کمی آئی ، رواں سال ایڈمٹ کارڈز پاکستان پرنٹنگ پریس سے چھپوائے گئے، خصوصی کاغذ اور نشانات کے استعمال کی وجہ سے ایڈمٹ کارڈز پر امیدوار کی تصویر تبدیل کرنا ناممکن بنادیا گیا جس کی وجہ سے اصل امیدوار کی جگہ دوسرے شخص کے امتحانات دیکھنے کے واقعات ختم ہوگئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ پہلے مرحلے کی طرح دوسرے مرحلے میں بھی امتحانات کے پرامن اور بلاتعطل انعقاد اور طلبہ کی سہولت کیلیے ہوم ڈپارٹمنٹ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری یونیورسٹیز اینڈ بورڈز ڈپارٹمنٹ حکومت سندھ، سیکرٹری ٹو گورنمنٹ آف سندھ کالجز، کمشنر کراچی، ڈی جی رینجرز، آئی جی پولیس ،کے الیکٹرک اور واٹر بورڈ کو خطوط لکھ دیے گئے ہیں تاکہ امتحانات کے دوران امن و امان ، امتحانی مراکز کی سیکورٹی اوربجلی و پانی کی بلاتعطل فراہمی کو ممکن بنایا جاسکے۔انہوں نے بتایا کہ امتحانات میں کسی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے اور نقل کی روک تھام کیلیے کمشنر آفس کراچی اور اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں دو مانیٹرنگ سیل بنائے گئے ہیں ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں