صادق سنجرانی کوقائم مقام صدر مقرر کیے جانے کیخلاف درخواست،اٹارنی جنرل طلب 

64

اسلام آباد( آن لائن)اسلام آباد ہائی کورٹ نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کو قائم مقام صدر مقرر کیے جانے کے خلاف دائر درخواست پر نوٹس کی عدم تعمیل پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے
فریقین کو دوبارہ نوٹس جاری کرنے اوراٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف کو پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے مزید سماعت 21 مئی تک کے لیے ملتوی کر دی۔گزشتہ روزاسلام آباد ہائی کورٹ کے سنگل رکنی بینچ پر مشتمل جسٹس عامر فاروق نے چیئر مین سینیٹ صادق سنجرانی کو قائم مقام صدر مقررکیے جانے کے خلاف دائر درخواست پر سماعت کی۔ سماعت شروع ہوئی تو فاضل عدالت کو بتایا گیا کہ نوٹس کی تعمیل نہیں ہوسکی، جس پر سماعت میں 15منٹ کا وقفہ کیا گیا اور فریقین کو نوٹس کی تعمیل نہ ہونے پر جسٹس عامر فاروق نے رجسٹرار آفس سے ریکارڈ طلب کیا۔رجسٹرار آفس کے نوٹس برانچ کے عملے نے ریکارڈ عدالت میں پیش کیا،جس کے بعد عدالت نے اٹارنی جنرل،چیئر مین سینیٹ اور وفاق کو دوبارہ نوٹس جاری کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے اٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف کو 27 اے کا نوٹس جاری کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ اٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف پیش ہوں۔عدالت نے حکم دیا کہ درخواست گزار کے وکیل ابھی ڈپٹی اٹارنی جنرل کو رٹ پٹیشن کی کاپی فراہم کریں۔درخواست گزار افضل خان شنواری کی جانب سے افتخار بشیر ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں