بولٹن مارکیٹ کے متاثرہ دکانداروں کامظاہرہ،دھرنے کااعلان

104
صدر آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز محمود حامد مظاہرین سے خطاب کررہے ہیں
صدر آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز محمود حامد مظاہرین سے خطاب کررہے ہیں

کراچی(اسٹاف رپورٹر)تاجروں کو دیوار سے لگانے کی کوشش کی گئی تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے تاجروں کو کمزور نہ سمجھا جائے ،تجاوزات کے خلاف آپریشن کا رخ قانونی مارکیٹوں کی جانب موڑنے اور 300سے زائد دوکانوں کو کھنڈر بنانے کے ذمہ داروں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے ۔40سیل دوکانوں کو ڈی سیل نہ کیا گیا تو ایم اے جناح روڈ پر دھرنا دیں گے۔ اس بات کا اعلان آج بولٹن مارکیٹ کے متاثرہ دکانداروں کے مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کے صدر محمود حامد نے کیا ۔مظاہرے سے میرٹ روڈ اسمال ٹریڈرز کے صدر عثمان شریف ، بولٹن مارکیٹ ٹریڈرز کے رہنما شیخ محمد جمیل، اقبال یوسف اور دیگر نے بھی کیا ۔محمود حامد نے کہا کہ تاجر پرامن ہیں اور ہم کسی غیر قانونی سرگرمی کی حمایت نہیں کرتے مگر قانونی شیڈز اور سائن بورڈ کو مشینری سے توڑنا جس کے نتیجے میں دوکانوں کے شیڈز زمین بوس ہوگئے ،ظلم کی انتہا ہے کہ تاجر شیڈز کا ٹیکسDMCکو ادا کرتے ہیں پھر انہیں بغیر نوٹس کے توڑنے کا مقصد صرف تاجروں کو بیروزگار کرکے مشتعل کرنے کے سوا کچھ نہیں ،بے رحمانہ آپریشن کے نتیجے میں تاجروں کو دو روز میں 27کروڑ روپے کا نقصان اُٹھانا پڑا ہے ۔تاجروں نے مظاہرے کے دوران میڈیا کو بتایا کہ یہ ساری کاروائی DMCکے اہلکاروں نے بغیر نوٹس کے کرئی اور سر کاری اہلکاروں نے دکانوں میں موجود مال کی توڑ پھوڑ کی بلکہ اس مال کی لوٹ مار بھی کی ۔ جو نام نہاد لیڈر کہتا ہے کہ میں نے تاجروں کو شیڈ ہٹانے کے نوٹس دیے تھے وہ جھوٹ بول رہا ہے یہی لیڈر سانحہ عاشورہ کے بعد تاجروں کے تین کروڑ 85لاکھ روپے کے غبن میں بھی ملوث ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ