اقامہ پر نا اہلی :عدلیہ نے نواز شریف کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع فراہم کیا،عمران خان

135
اقامہ پر نا اہلی :عدلیہ نے نواز شریف کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع فراہم کیا،عمران خان
اقامہ پر نا اہلی :عدلیہ نے نواز شریف کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع فراہم کیا،عمران خان

اسلام آباد (خبر ایجنسیاں)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ عدالت عظمیٰ کو پاناما کیس میں نواز شریف کو جھوٹ بولنے پر سیدھا جیل میں ڈالنا چاہیے تھا لیکن اقامے پر نااہل کرکے سابق وزیر اعظم کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع دیا گیا۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پاناما کیس میں عدالت عظمیٰ کو نواز شریف کو جھوٹ بولنے پر جیل میں ڈالنا چاہیے تھا مگر عدالت نے اقامے پر فیصلہ دے کر نواز شریف کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع دے دیا، ہم نے عدالت میں جو ثبوت پیش کیے اور جے آئی ٹی میں جو شواہد سامنے آئے ان کی بنیاد پر نواز شریف کو سیدھا جیل ہونی چاہیے تھی۔عمران خان نے کہا کہ عدالت میں ایک جھوٹ پکڑے جانے پر کیس ختم اور اسی روز3 برس کے لیے جیل ہوجاتی ہے، نواز شریف کا سب سے بڑا جھوٹ اس وقت پکڑا گیا جب انہوں نے قطری خط پیش کیا، پاناما کیس اسی روز ختم ہوگیا تھا، دوسرا جھوٹ اس وقت پکڑا گیا جب مریم نواز اور حسین نواز کی ٹرسٹ ڈیڈ میں کیلبری فونٹ کی جعل سازی سامنے آئی،اس پر بھی شریف خاندان کو جیل ہوسکتی تھی۔عمران خان نے ملک بھر میں ہنگامی دوروں کا آغاز کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جلد اسلام آباد میں ایک بڑا جلسہ عام کرؤں گا جس میں عوام چوروں کے خلاف اور عدلیہ و انصاف کے ساتھ کھڑے ہونے کا ثبوت دے گی۔سربراہ پی ٹی آئی نے کہا کہ نااہل شخص کو 300 ارب کی منی لانڈرنگ پر نکالا گیا اس کے باوجود ’’ کیوں نکالا‘‘ کے ٹور پر نکلنے والے نواز شریف کے مقابلے میں کئی گنا بڑا جلسہ اسلام آباد میں کر کے بتاؤں کا گہ انہیں کیوں نکالا گیا،اب ایسے نہیں چلے گا کہ کرپشن کر کے اپنی تجوریاں بھری جائیں اور جب عدلیہ سزا دے تو پٹواریوں کو بلا کر جلسے کرتے پھریں اور ’’عوامی عدالت‘‘ کے راگ الاپنے لگیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے منی لانڈرنگ کرنے کے لیے اپنے سمدھی اسحاق ڈار کو وفاقی وزیر خزانہ بنایا اس کے باوجود عدالت میں منی ٹریل ثابت نہیں کرسکے تو قطری شہزادے کا خط لے آئے اور کتنی شرم کی بات ہے کہ ملک کا وزیراعظم اقامے پر بیرون ملک معمولی ملازمت بھی کر رہا تھا؟ ایسے شخص کو نااہل نہ کیا جاتا تو کیا کیاجاتا؟۔عمران خان نے کہا کہ پنجاب پولیس شہباز شریف کی ذاتی فورس بن چکی ہے جس کے ذریعے وہ مخالفین کو ٹھکانے لگاتے ہیں جس کا ثبوت عابد باکسر کی گرفتاری ہے جسے انٹرپول کے ذریعے پاکستان لایا گیا ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ