مقبوضہ کشمیر افضل گورو کی برسی پر مکمل ہَڑتال حریت نظر بَند

117

سرینگر ( آن لائن )مقبوضہ کشمیر میں کشمیری رہنما محمد افضل گورو کی شہادت کی پانچویں برسی پر مکمل ہڑتال رہی ۔ مقبوضہ وادی میں دکانیں اور کاروباری مراکز مکمل طور پر بند رہے جبکہ سڑکوں پر ٹریفک نہ ہونے کے برابر تھا ۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے دی ۔ یا درہے کہ بھارت نے محمد افضل گورو کو 9فروری2013کو جبکہ محمد مقبول بٹ کو 11فروری1984کو جد وجہدآزادی میں انکے کردار کی پاداش میں نئی دلی کی بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں پھانسی دیکر انکی میتوں کو جیل کے احاطے میں ہی دفن کر دیا تھا۔دریں اثنا کٹھ پتلی انتظامیہ نے محمد افضل گورو اور محمد مقبول بٹ کی برسیوں پر ہونے والے پروگراموں میں شرکت سے روکنے کے لیے سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق،محمد یاسین ملک، محمد اشرف صحرائی، مختار احمد وازہ، غلام احمد گلزار، بلال صدیقی، محمد اشرف لایہ عمر عادل ڈار اور سید امتیاز حیدرکوگھروں ، تھانوں اور جیلوں میں نظر بند کر دیا ہے۔انتظامیہ نے لوگوں کو احتجاجی مظاہروں سے روکنے کیلئے سرینگر اور محمد افضل گورو کے آبائی علاقے سوپور سمیت شمالی کشمیر کے کچھ علاقوں میں پابندیاں نافذ کر دی ہیں اور بڑی تعداد بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار تعینات کردیے ہیں۔ بارہمولہ سے جموں خطے کے علاقے بانیہال تک ریل سروس بھی معطل کر دی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ