عدم تعاون پر بلوچستان کابینہ کے ارکان ناراض، استعفے کی دھمکی دیدی 

65

کوئٹہ (نمائندہ جسارت) بلوچستان کابینہ کے 8 وزیر اور مشیر بیوروکریسی کے عدم تعاون اور وزیر اعلیٰ ہاؤس میں غیر منتخب افراد کی تعیناتی پر ناراض ہو گئے۔ وزیر داخلہ سرفراز بگٹی، وزیر صحت ماجد ابڑو،وزیر زراعت جعفر مندوخیل ، وزیر ماحولیات پرنس احمد علی اور مشیر خزانہ ڈاکٹر رقیہ ہاشمی سمیت بعض دیگر وزیر اور مشیر بلوچستان حکومت کے موجودہ سیٹ اپ پر ناراض ہوگئے۔ ناراض وزراء نے الزام عائد کیا ہے کہ بیوروکریسی کوئی تعاون نہیں کر رہی اور مختلف محکوموں میں خالی اسامیاں نگران سیٹ اپ کے لیے چھپا رہی ہے جبکہ وزیر اعلیٰ ہاؤس میں بھی ان کے مقابلے میں غیر منتخب لوگوں کی رائے کو اہمیت دی جارہی ہے۔ناراض وزراء نے متنبہ کیا ہے کہ اگر ان کے خدشات دور نہ کیے گئے تو وہ کابینہ چھوڑ دیں گے۔ تاہم وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے کہا ہے کہ کابینہ کے وزرا ء کی ناراضگی سے متعلق خبر میں کوئی حقیقت نہیں۔ وزیر اعلیٰ میر عبدالقدوس بزنجو کی قیادت میں پوری کابینہ صوبے کی ترقی کے لیے کوشاں ہے ۔ انہوں نے اختلافات کیخبروں کی تر دید کر دی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email