حیدر آباد، ایڈیشنل سیشن جج کے گھر پر حملے کیخلاف وکلا کا احتجاج

39

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) میہڑ میں ایڈیشنل سیشن جج کے گھر پر مسلح افراد کے حملے کیخلاف حیدر آباد میں وکلا نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ حیدر آباد پریس کلب کے سامنے کیے گئے احتجاجی مظاہرے کے شرکا پلے کارڈز اٹھائے ملزمان کی گرفتاری کا مطالبہ کررہے تھے۔ وکلا رہنماؤں کا کہنا تھا کہ مسلح افراد نے میہڑ میں ایڈیشنل سیشن جج غلام علی کے گھر پر حملہ کیا، جو آزاد عدلیہ پر حملہ ہے۔ پولیس میہڑ میں 3 افراد کے قتل میں ملوث بااثر ملزمان کو گرفتار کرنے میں ناکام ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ججوں کو تحفظ دینے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے اور ایڈیشنل سیشن جج کے گھر پر حملے میں ملوث کسی بھی ملزم کو گرفتار نہیں کیا جاسکا جو قابل مذمت ہے۔ مظاہرین نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی کہ وہ میہڑ میں ایڈیشنل سیشن جج کے گھر پر حملے کا از خود نوٹس لیں اور ملزمان کو گرفتار کرکے انہیں قرار واقعی سزا دی جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ