گز شتہ 5سال سے حکو مت نے ٹیکسٹا ئل سیکٹر پر توجہ نہیں دی

48

کراچی (اسٹاف رپورٹر )گز شتہ 5سالوں سے حکومت نے ٹیکسٹا ئل سیکٹر پر توجہ نہیں دی ،برآمد کنندگان کو ریفنڈ کی عدم ادائیگی کی وجہ سے ہزاروں چھوٹے بڑے کار خا نے ہمیشہ کے لیے بند ہو گئے اور مشنری اسکریپ کا ڈھیر بن گئی لا کھوں پاور لومز ورکرز اور اس شعبے سے وابستہ افراد بے روز گار ہو ئے۔ ذرائع نے بتا یا کہ چین میں ما حو لیاتی مسا ئل اور ڈبلیو ٹی او کی پا بندی کے با عث انٹر نیشنل خریداروں نے ایک مرتبہ پھر پا کستان کا رخ کر لیا پاکستان کے برآمد کنندگان کو پھر موقع مل گیا کہ وہ انٹر نیشنل مارکیٹ میں سودے بازی شروع کر یں ملکی برآمد کنندگان نے حکو مت سے مطا لبہ کیا کہ ٹیکسٹا ئل سیکٹر کے لیے بجلی اور گیس کے نرخ دیگر ہمسا یہ مما لک کے ٹیرف ریٹ کے مسا وی کیے جا ئیں تا کہ ٹیکسٹا ئل سیکٹر انٹر نیشنل ما ر کیٹ میں اپنی کھو ئی ہو ئی سا کھ بحال کر سکے اور لا کھوں کی تعداد میں بے روز گار ہو نے والے ٹیکسٹا ئل سیکٹر کے مزدوروں کو دوبارہ روزگار مل سکے۔ ٹیکسٹا ئل سیکٹر سے وابستہ مختلف تنظیموں نے کہا کہ اگر حکو مت ٹیکسٹا ئل سیکٹر کو ریلیف پیکج کے تحت سہو لیات فراہم کرے تو گز شتہ چند سالوں سے ملک سے دیگر ممالک میں منتقل کی گئی مشنری دوبارہ پا کستان منتقل ہو سکتی ہے ۔
جس بے روز گاری میں کمی آئے گی اور پاکستان کو کثیر زر مبا دلہ بھی حا صل ہو گا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ