بھارتی آرمی چیف کچھ بھی بولے، منہ توڑ جواب ملے گا‘پاکستان

143

اسلام آباد (آن لائن ) پاکستان نے کہا ہے کہ بھارتی آرمی چیف کچھ بھی بولے، منہ توڑ جواب ملے گا‘ کلبھوشن یادیو کی گرفتاری بھارتی مداخلت کا منہ بولتا ثبوت ہے‘ خلائی ٹیکنالوجی کا استعمال ہتھیاروں کی دوڑ کے لیے نہیں بلکہ پرامن مقاصد کے لیے ہونا چاہیے‘طالبان کو افغان مفاہمتی عمل میں شامل کیا جائے‘ امداد روکنے کے امریکی بل کا جائزہ لے رہے ہیں‘ چینی باشندوں کے تحفظ کو یقینی بنائیں گے۔ گزشتہ روز دفتر خارجہ میں ہفتے وار پریس بریفنگ کے دوران ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ ہماری افواج بھارتی جارحیت کا جواب دینے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہیں‘ بھارتی آرمی چیف کے بیانات سے پاکستان آرمی کو کوئی فرق نہیں پڑتا‘ شہادت مومن کا مطلوب و مقصود ہے‘ پاکستان میں تخریب کاری کے لیے بھارتی مداخلت کسی سے ڈھکی چھپی نہیں رہی‘ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی گرفتاری بھارتی مداخلت کا منہ بولتا ثبوت ہے‘ بھارت آج تک جواب نہیں دے سکا کہ کل بھوشن یادیو کے پاس حسین مبارک کا پاسپورٹ کہاں سے آیا‘ ہم جنوری2017ء سے بھارتی جاسوس کی ریٹائرمنٹ کی دستاویزات مانگ رہے ہیں‘ بھارت نے ابھی تک وہ دستاویزات بھی نہیں دیں۔ ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ ہر ریاست کو خلائی ٹیکنالوجی استعمال کرنے کا پورا حق ہے لیکن یہ حق پرامن مقاصد کے لیے ہونا چاہیے‘اس سے ہتھیاروں کی دوڑ نہیں شروع ہونی چاہیے۔ ترجمان نے کہا کہ امریکی ایوان نمائندگان میں پاکستان کو غیردفاعی امداد روکنے کے بل کا جائزہ لے رہے ہیں‘ افغان مسئلے کو سیاسی طریقے سے حل کرنا چاہیے‘ حزبِ اسلامی کی طرز پر دیگر گروپوں بشمول طالبان سے بھی مفاہمت کی جانی چاہیے‘ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر کام جاری ہے‘ جلد معاملات طے ہو جائیں گے ۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ چینی شہری کے قاتلوں کوجلد گرفتار کرکے کیفرکردار تک پہنچایا جائے گا‘ پاکستان کی ترقی میں چین کا کلیدی کردار ہے‘ پاکستان میں چینی باشندوں کے تحفظ کو ہرممکن یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ پاک، سعودی بحری افواج کے مابین مشترکہ مشقیں تواتر کے ساتھ جاری ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ