فاٹا کاپختونخوامیں انضمام ہی تمام مسائل کا حل ہے‘مشتاق خان

130

پشاور ( نمائندہ جسارت )امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ فاٹا کے تمام مسائل کا حل ایف سی آر کا خاتمہ اور خیبر پختونخوا میں انضمام ہے، فاٹا بجلی، پینے کے صاف پانی، تعلیمی سہولیات ، انسانی حقوق سے محروم ہے، فاٹا کا مسئلہ قومی اور انسانی مسئلہ بن چکا ہے۔ وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ جلد از جلد فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کا اعلان کرے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے المرکزالاسلامی پشاور سے جاری کیے گئے بیان میں کیا۔ان کا کہنا تھا کہ فاٹا ایک کھلی جیل کی مانند بن چکا ہے۔ صوبائی حکومت اور تمام ادارے فاٹا کے انضمام کے لیے تیار ہیں لیکن وفاقی حکومت فاٹا کے ساتھ دشمنوں والا سلوک کررہی ہے۔ ایک کروڑ لوگوں کے لیے 70 سال سے قانون سازی نہیں ہورہی ۔ جماعت اسلامی گزشتہ 4عشروں سے فاٹا کے حقوق کے لیے لڑ رہی ہے۔ سرتاج عزیز کمیٹی کی رپورٹ کو قومی اسمبلی، سینیٹ اور کابینہ نے منظور کیا لیکن حکومت عمل درآمد سے کترا رہی ہے۔ حکومت پارلیمنٹ، سینیٹ اور کابینہ کی توہین کررہی ہے۔ عام انتخابات قریب لیکن فاٹا کا انضمام دور دور تک نظر نہیں آرہا۔ وفاقی حکومت فاٹا کے عوام کے ساتھ فراڈ کررہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ قبائلی عوام کو ماورائے عدالت قتل کیا جارہا ہے،نقیب اللہ محسود کا قتل ظالمانہ فعل ہے،سندھ حکومت اور پولیس تاحال نقیب اللہ محسود کے قاتل راؤ انوار کو گرفتار نہ کرسکی۔ اسلام آباد میں منعقدہ دھرنے کی حمایت کرتے ہیں، حیرت ہے راؤ انوار ٹاک شوز میں تو آتے ہیں لیکن گرفتار نہیں ہو پارہے، حکومت نقیب اللہ محسود کے قاتلوں کی گرفتاری یقینی بنائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ