باجوڑ ، حجاج اور عمرہ زائرین کا بائیو میٹرک کیخلاف احتجاج

104

باجوڑایجنسی (آئی این پی ) باجوڑ ایجنسی میں حجاج اور عمرہ زائرین پر 2 ہزارریال ٹیکس اوربائیو میٹرک کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ۔ حجاج اور عمرہ زائرین کو ذلیل کرنے کی سازش کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔ تفصیلات کے مطابق باجوڑ ایجنسی ٹریول ایسو سی ایشن کی جانب سے حاجی اصغر خان اورحاجی نعیم اللہ خان و دیگر نے باجوڑ پریس کلب میں عمرہ اور حج زائرین پر لگائے گئے دو ہزار ریال ٹیکس اور بائیو میٹرک طریقہ کار کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اعتماد نامی کمپنی کے ذریعے عمرہ و حج زائرین کی تذلیل ناقابل برداشت ہے ،ایک طرف ان کو قطاروں میں کھڑا کرکے کئی دنوں سے انتظار میں رکھا جا رہا ہے تو دوسری طرف وی آئی پی کمپنی کو ادائیگی کرکے قطاروں سے چھٹکارا حاصل کرتے ہیں جو سراسر ظلم ونا انصافی ہے ۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب ہمارا برادر اسلامی ملک ہے جہاں ہمارے مقدس مقامات موجود ہیں جس کی زیارت ہر مسلمان کی دلی خواہش ہوتی ہے، پاکستان سے سالانہ سولہ لاکھ زائرین مقامات مقدسہ کی زیارت کیلیے جاتے ہیں جو پوری دنیا میں یہ تعداد سب سے زیادہ ہے، اس سے قبل دیگر اسلامی ممالک نے دو ہزار ریال اضافی ٹیکس اور بائیو میٹرک فیصلے کو مسترد کرکے منظور نہیں کیا موجودہ فیصلہ دونوں اسلامی ملکوں کے درمیان تعلقات خراب کرنے کی گہری سازش ہے۔ اس موقع پر عمرہ و حج زائرین پر لگائے گئے ٹیکس اور بائیو میٹرک فیصلے کیخلاف نعرہ بازی کی اور واک کا اہتمام بھی کیا۔انہوں نے کہا کہ سعودی حکومت کی جانب سے پاکستانی زائرین کے لیے انڈین اعتماد کمپنی کے فنگر پرنٹس پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہ اولاً تو اس کی کوئی ضرورت ہی نہیں، اگر سعودی حکومت لازماً چاہتی ہے تو نادرا کے پاس تمام ریکارڈ موجود ہے بائیو میٹرک بھی انہیں سے کروایا کریں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے ملک نے ہر وقت حرمین شرفین کی حفاظت کیلیے جان کی قربانی سے بھی دریغ نہیں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ دوسرے ممالک کے ایک قانون اور ہمارے ملک کے لیے دوسرا قانون یہ ناانصافی ہے،انڈین اعتماد کمپنی کے ذریعے ہمیں ذلیل نہ کیا جائے۔ انہوں نے عمرہ و حج زائرین کے دوبارہ جانے پر دو ہزار ریال ٹیکس ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔اُنہوں نے صدر ، وزیر اعظم،گورنر خیبر پختونخوا اورچیف جسٹس آف پاکستان سے پُر زور مطالبہ کیا کہ اس غیر منصفانہ فیصلے کے خلاف کارروائی کرکے حج عمرہ زائرین پر لگائے گئے ٹیکس کا خاتمہ کیا جائے اور بائیومیٹرک تصدیق لوکل نادارا آفس سے تصدیق کی جائے تاکہ عوام کو قطاروں میں کھڑے ہونے سے نجات مل سکے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ