بھارت کو منہ توڑ جواب نہ دیا گیا تواس کے حوصلے بڑھیں گے

109

فیصل آباد(وقائع نگار خصوصی)جماعت اسلامی کے رہنماؤں سردارظفرحسین خان ایڈووکیٹ ،رانا وسیم احمد، محبوب الزماں بٹ،غلام عباس خان اور انجینئر عظیم رندھاوا نے بھارت کی طرف سے یوم یکجہتی کشمیر کے دن ورکنگ باؤنڈری پر بلا اشتعال فائرنگ کر کے معصوم شہریوں کو شہید کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ا صرف ایک سال میں90مرتبہ سے زائد باربھارت کی طرف سے ورکنگ باؤنڈری کے پار فائرنگ کے واقعات پیش آچکے ہیں جس میں درجنوں سول اور آرمی افراد شہید ہو چکے ہیں مگر ہمارے حکمران دھنیا پی کر بیٹھے ہیں ،بھارت کو منہ توڑ جواب نہ دیا گیا تواس کے حوصلے بڑھیں گے، اور اگلا ہدف پارلیمنٹ بھی ہو سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف حکمران بھارتی جاسوس کلبھو شن کی اس کے اہل خانہ سے ملاقات کروا رہے ہیں تو دوسری طرف بھارت احسان فراموشی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہمارے جوانوں کو شہید کر رہا ہے ، بھارت پاکستان میں قیام امن کی کوششوں کو سبو تاژ کرنے کیلیے معصوم شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بناتا ہے جبکہ پاکستانی حکمران بھارت سے تجارت اور دوستی کیلیے بے قرار ہیں ، پاکستان کا بچہ بچہ اپنے وطن کی حرمت پر کٹ مرنے کو تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان کو عدم استحکام اور انتشار کا شکار کرنے کیلیے اپنے مکروہ ایجنڈے پر کاربند ہے ۔انہوں نے کہا کہ تخریب کاری کے درجنوں واقعات کے پیچھے بھارتی نیٹ ورک کی موجودگی کے تمام ثبوت قومی سلامتی کے اداروں کے پاس ہیں، بھارت کے کشمیر پر غاصبانہ قبضے اور کشمیریوں کے قتل عام پر ان عالمی طاقتوں کی خاموشی مسلم دشمنی کا کھلا ثبوت ہے ۔ عالمی برادری نے کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دلانے کے لیے اقوام متحدہ کی قرار دادوں پر عمل کرانے میں اپنا فرض پورا نہیں کیا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ