نواب شاہ بار کے سینئر وکیل پر مقدمہ اور گرفتاری کیخلاف وکلا برادری کا احتجاج

63

نواب شاہ (رپورٹ:عامر شیخ ) نواب شا ہ بار کے وکیل کے خلاف مقدمہ اور گرفتاری کے خلاف نواب شاہ کی وکلا برادری سراپا احتجاج، ایس ایس پی آفس کے سامنے دھرنا و مظاہرہ سخت نعربازی، ایس ایس پی کی یقین دہانی پر احتجاج ختم۔تفصیلات کے مطابق نواب شاہ ڈسڑکٹ بارایوسی ایشن کے ممبر اور سینئر وکیل میر محمد بھنگوار کی گرفتاری کے خلاف ڈسڑکٹ بار کے وکیلوں نے احتجاجی ریلی نکالی اور ایس ایس پی آفس کے سامنے دھرنا دیا۔ اس موقع پروکلا برادری نے سخت نعرے بازی اور روڈ بلاک کرکے دھرنا دیا جس کے باعث ٹریفک کی روانی سخت متاثر ہوئی۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سینئر وکیل جسٹس آف پیس کلیم جٹ،غلام مصطفی کورائی اورمختار رند کا کہنا تھا کہ ائرپورٹ پولیس نے ہمارے ساتھی وکیل کے ساتھ سخت زیادتی کی ہے اور بھتا لینے کی جھوٹی درخواست پر سینئر وکیل میر محمد بھنگوار کے خلاف انسداد دہشت گردی کا مقدمہ مقدمہ درج کرلیا ہے جو کہ سراسر ناانصافی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جھوٹے مقدمے میرمحمد بھنگوار کو ہھتکڑیاں لگا کر کورٹ میں پیش کیا گیا ہے جس کی ہم سخت مذمت کرتے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ جب تک میر محمد بھنگوار پر سے جھوٹی ایف آئی آر ختم نہیں ہو گی احتجاج جارہی رہے گا اور اس سلسلے میں سندھ بار کونسل سے بھی اپیل کی جاتی ہے کہ اپنی وکلا برادری کاساتھ دے۔ اس موقع پر ایس ایس پی شہید بینظیر آباد ساجد امیر سدوزئی نے وکلا برادری کے وفد سے اپنے آفس میں ملاقات کی اور تمام تحفظات دور کرنے اور سینئر وکیل میر محمد بھنگوار کے مقدمے میں سے انسداد دہشت گردی کی دفعات ختم کرنے کا اعلان کیا اور ایف آئی آر کی نئی انکوائر ی کرانے کا حکم دیا جس کے بعد وکلا برادری اپنا دھرنا اور احتجاج ختم کرکے پرامن طور پر منتشر ہوگئی

Print Friendly, PDF & Email
حصہ